آزمائے ہوئے ٹولے نے ملک کو بحرانوں کی آماجگاہ بنا دیا، سراج الحق
24 فروری 2020 (18:45) 2020-02-24

سوات:امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ وزیراعظم کی ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھر دینے کے وعدوں کی خیالی عمارت زمین بوس ہوگئی۔حکومت پہلے دن سے ہی وژن کے بحران کا شکار ہے۔پہلے سے آزمائے ہوئے ٹولے نے ملک کو بحرانوں کی آماجگاہ بنا دیا ۔

وزیراعظم کو 22کروڑ عوام کی نہیں اپنے کچھ پیاروں کے مفادات کی فکر ہے۔اگر وہ آٹے اور چینی کا بحران پید اکرنے والوں کو جانتے ہیں تو پھر اب کمیٹیاں بنانے کی کیا ضرورت ہے ۔آٹے چینی کے ذخیرہ اندوز اور راتوں رات اربوں کمانے والے کسی سے چھپے ہوئے نہیں ،وزیراعظم کے ہی آس پاس موجود ہیں انہیں ڈھونڈنے کی نہیں پکڑنے کی ضرورت ہے ۔وزیر اعظم کو اگر واقعی احتساب میں دلچسپی ہوتی تو سب سے پہلے خود کو اور اپنے وزراءکو احتساب کیلئے پیش کرتے ۔

بڑے مجرموں کی پردہ پوشی اور چھوٹوں کو جیلوں میں بند کرنے سے جرائم کا خاتمہ نہیں ہوگا ۔مہنگائی اور بے روز گاری کی صورتحال یہی رہی تو حکمران عوامی غیظ و غضب سے نہیں بچ سکیں گے ۔جب تک خوف خدا رکھنے والی دیانتدار قیادت برسراقتدار نہیں آتی مسائل حل نہیں ہونگے ۔72سال میں ایک بار بھی اسلام کے عادلانہ نظام کو نہیں آزمایا گیا۔آئینی تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے سود کا خاتمہ کرکے عشروزکواة کے معاشی نظام کو رائج کیا جائے ۔جب تک اللہ سے بغاوت کا رویہ ترک نہیں کیا جاتا معاشی ترقی اور خوشحالی تصور بھی نہیں کیا جاسکتا ۔مدارس اسلام کے قلعے ہیں ان کے تحفظ کیلئے کوئی کسر اٹھا نہیں رکھیں گے ۔آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن پر مدارس کے خلاف کوئی قدم اٹھایا گیا تو حکمرانوں کے خلاف پوری قوم اٹھ کھڑی ہوگی۔


ای پیپر