شہباز شریف واپس آئیں، مریم چپ کا روزہ توڑیں، قمر زمان کائرہ
24 دسمبر 2019 (17:21) 2019-12-24

اسلام آباد: پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ شہباز شریف کی بڑی ذمہ داری ہے، حالات کا تقاضہ ہے کہ شہباز شریف واپس آئیں، مریم بی بی سے بھی گزارش ہے کہ وہ چپ کا روزہ توڑیں،ہمیں حکومت سے کسی سیاسی سرگرمی کی اجازت لینے کی ضرورت نہیں ہے،اپنا سیاسی حق استعمال کرتے ہوئے کس جگہ پر جلسہ کرنا چاہتے ہیں، انتظامیہ کا کام سیکیورٹی دینا ہے، عدالت نے جلسہ کر نے کی اجازت دی ہے ہم جلسہ ضرور کرینگے ،آرمی چیف کی توسیع سے متعلق حکومت بل لائے گی تو ہماری پارٹی لائحہ عمل دے گی۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ ہمیں حکومت سے کسی سیاسی سرگرمی کی اجازت لینے کی ضرورت نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمیں صرف اطلاع کرنی ہے کہ اپنا سیاسی حق استعمال کرتے ہوئے کس جگہ پر جلسہ کرنا چاہتے ہیں، انتظامیہ کا کام سیکیورٹی دینا ہے۔رہنما پیپلز پارٹی نے کہا کہ ہمیں انتظامیہ یا حکومت سے کسی اجازت کی ضرورت نہیں، ہم عدالت کے مشکور ہیں جس نے ہمیں اجازت دی ہے، انشاءاللّٰہ ہم جلسہ کریں گے۔قمر زمان کائرہ نے کہا کہ آج بھی پاکستان ایک بہت بڑے بحران کا سامنا کر رہا ہے، نہ فوج اور نہ ججز، ہم آئین اور قانون کے ساتھ ہیں، جو ادارہ بھی آئین سے باہر جائے گا تو اپنا اعتراض ظاہر کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ سب جماعتیں اب مطالبہ کر رہی ہیں کہ ان ہاﺅس چینج نہیں، نئے الیکشن کی ضرورت ہے، نئے الیکشن اس ملک کا تقاضہ ہیں، اگلا سال بالکل الیکشن کا سال ہے۔قمر زمان کائرہ نے کہا کہ آرمی چیف کی توسیع سے متعلق حکومت بل لائے گی تو ہماری پارٹی لائحہ عمل دے گی، ابھی معلوم نہیں کہ حکومت کا کیا عزم اور ارادہ ہے۔

انہوںنے کہاکہ وزیر اعظم عمران خان اور وزراءکے بیانات سے معلوم ہوتا ہے کہ اپوزیشن کو دور کر کے قانون سازی روکنا چاہتے ہیں۔رہنما پاکستان پیپلز پارٹی قمر زمان کائرہ نے کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان جی بھر کر برا کہیں تو یہی لگتا ہے کہ وہ بل منظور کرانا نہیں چاہتے۔چوہدری منظور نے کہاکہ بلاول بھٹو زرداری خاموش نہیں ہونگے، جو طاقتیں پیپلزپارٹی کا وجود ختم کرنا چاہتی ہیں وہ اب بھی برسر پیکار ہیں۔


ای پیپر