میں بھی ایک انسان ہو ں کوئی پتھر تو نہیں،گرفتاری کے وقت نواز شریف کا ردعمل
کیپشن:   Image Source : Twitter
24 دسمبر 2018 (19:41) 2018-12-24

اسلام آباد :سابق وزیر اعظم نواز شریف نے عدالتی فیصلہ سننے کے بعد پہلا ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ میرے خلاف ایک روپے کی کرپشن ثابت نہ ہو سکی ، میں نے کبھی اختیارات کا غلط استعمال نہیں کیا ،کرپشن نہیں کی اس لئے ضمیر مطمئن ہے ۔

عدالت کے باہر نواز شریف نے کہا کہ میں بھی ایک انسان ہوں کوئی پتھر تو نہیں، ہم تو ہیں پتھر کے انساں ہم تو یہ دکھ بھی سہہ گئے ، حوصلہ اللہ دیتا ہے، حوصلہ نہیں چھوڑنا چاہیے، عزم اتنا بلند اور مضبوط ہو تو حوصلہ کیوں چھوڑیں،کیس میں کچھ نہیں اس لیے زیادہ زیادتی کر بھی نہیں سکتے، ایک بار پھر پاکستان کو پٹری سے اتار دیا گیا ہے، موجودہ حکومت نے عوامی ترقی کے سفر کو سبوتاژ کردیا۔

مریم کو کہا کہ آپ میری والدہ کے ساتھ رہیں، وہ اس عمر میں روتی ہیں تو میرا دل روتا ہے،مریم بھی آج تک اپنی والدہ کو بہت یاد کرتی ہیں، ایمانداری سے ملک اور عوام کی خدمت کی، کرپشن اور اختیارات کا ناجائز استعمال بھی نہیں کیا، اللہ سے پوری امید ہے کہ انصاف ملے گا۔

عدالتی احاطے میں نواز شریف نے اشعار کا سہار لیتے ہوئے کہا ” جائیں تو جائیں کہاں، سمجھے گا کون یہاں ؟۔اے میرے دل کہیں اور چل ڈھونڈ لے اب کوئی اور نیا گھر۔سابق وزیراعظم کا کہنا تھاکہ حوصلہ اللہ دیتا ہے، حوصلہ نہیں چھوڑنا چاہیے، عزم اتنا بلند اور مضبوط ہو تو حوصلہ کیوں چھوڑیں۔ایک صحافی نے نوازشریف سے سوال کیا کہ مریم نواز فیصلہ سننے آنا چاہتی تھیں آپ نے منع کر دیا؟ اس پر انہوں نے جواب دیا کہ جی، مریم کو میں نے کہا وہ آئیں گی تو پریشان ہوں گی، مریم کو کہا کہ آپ میری والدہ کے ساتھ رہیں، وہ اس عمر میں روتی ہیں تو میرا دل روتا ہے۔میری چھوٹی بیٹی بھی لندن سے آئی ہوئی ہے وہ بھی آنا چاہتی تھی، مگر میں نے انہیں منع کیا ۔

ایک سوال کے جواب میں سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مریم آج تک اپنی والدہ کو بہت مس کرتی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان مسلم لیگ ن مضبوط ہاتھوں میں ہے، قافلہ رواں دواں رہے گا۔

پارٹی قیادت کے حوالے سے بات کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ یہ جو میرے دائیں بائیں کھڑے ہیں یہی لوگ اب پارٹی کی قیادت ہیں۔انہوں نے میڈیا کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انہیں میڈیا کے ساتھ بہت عقیدت ہے اور ذرائع ابلاغ کے ساتھ ایک اچھا تعلق رہا اسی لیے اس بات کی خوشی ہے کہ میڈیا نے کرپشن یا الزام سے متعلق کوئی لفظ نہیں کہا۔

اس سے قبل احتساب عدالت میں آمد کے موقع پر لیگی رہنماﺅں سے ملاقات کے دوران بات چیت کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ ایمانداری سے ملک اور عوام کی خدمت کی، کرپشن اور اختیارات کا ناجائز استعمال بھی نہیں کیا، اللہ سے پوری امید ہے کہ انصاف ملے گا۔نواز شریف نے کہا کہ کیس میں کچھ نہیں اس لیے زیادہ زیادتی کر بھی نہیں سکتے، ایک بار پھر پاکستان کو پٹری سے اتار دیا گیا ہے، موجودہ حکومت نے عوامی ترقی کے سفر کو سبوتاژ کردیا۔


ای پیپر