جمال خاشقجی کا قلم قطر نے خرید لیا تھا : واشنگٹن پوسٹ
24 دسمبر 2018 (15:22) 2018-12-24

واشنگٹن:امریکہ کے شہرہ آفاق جریدے واشنگٹن پوسٹ نے دعویٰ کیا ہے کہ قطری حکام نے جمال خاشقجی کی صحافتی خدمات خرید لی تھیں۔۔

اپنی ایک رپورٹ میں واشنگٹن پوسٹ نے دعویٰ کیا ہے کہ قطر کے حکمراں واشنگٹن پوسٹ میں شائع ہونے والے خاشقجی کے مقالات کے مضامین کا تعین کیا کرتے تھے۔ قطر کے عالمی ادارے کی ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ماجی متشیل سالم براہ راست مضامین کی بابت ہدایات دیا کرتی تھیں اوربعض اوقات انہیں مخصو ص موضوعات پر لکھنے کیلئے کہا کرتی تھیں۔ وہی انکے مضامین کے ترجمے کی اصلاح پربھی مامورتھیں۔

اخبار نے مزید لکھا کہ قطری میڈیا جمال خاشقجی کے واقعہ کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش کیوں کرتا رہا اور اس حوالے سے من گھڑت کہانیاں دنیا بھر میں جاری کرکے خاشقجی کے مسئلے کو افسانوی شکل کیوں دیتا رہا۔ 

جمال خاشقجی کے مضامین کی تیاری کے طریقہ کار پر روشنی ڈالتے ہوئے اخبار نے بتایا کہ قطر کا ایک بین الاقوامی ادارہ اپنے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ’’ماجی متشیل سالم کے ذریعے سے جمال خاشقجی کے مضامین کو کنٹرول کررہا تھا۔یہ ادارہ انکے مضامین کے افکار و خیالات کو ترتیب دیتا اور وہی واشنگٹن میں قطری سفارتخانے کے مترجم کے توسط سے انکے مضامین کے ترجمے انگریزی میں کرایا کرتا تھا۔ قطر نہ صرف یہ کہ مضمون کے موضوع کا انتخاب کراتا بلکہ مضمون کے لب و لہجے کی شدت اور تیزی کا فیصلہ بھی کیا کرتا تھا۔ 


ای پیپر