نواز شریف کیخلاف فیصلہ دوپہر 2 بجے تک سنائے جانے کا امکان
کیپشن:   فوٹو بشکریہ فیس بک
24 دسمبر 2018 (11:23) 2018-12-24

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اور فیلگ شپ ریفرنس کا فیصلہ دوپہر 2 بجے تک سنائے جانے کا امکان ہے۔

احتساب عدالت نمبر 2 کے جج ارشد ملک بھی تاحال عدالت نہیں پہنچے ہیں، احاطہ عدالت میں لیگی رہنما بڑی تعداد میں موجود ہیں۔ کمرہ عدالت میں ن لیگ کے وکلا اور رہنماؤں سمیت 15 افراد ہی جا سکیں گے۔ کمرہ عدالت میں نواز شریف کو کلوز پروٹیکشن یونٹ سیکیورٹی فراہم کی جائے گی۔ احتساب عدالت کے باہر ن لیگ کے کارکنوں کی بڑی تعداد جمع تھی۔ فیصلے سے قبل نواز شریف کی اپنے وکیل خواجہ حارث سے مشاورت جاری ہے۔

العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز کے فیصلے سے قبل اسلام آباد میں سیکیورٹی ہائی الرٹ ہے۔ سیکٹر جی الیون میں احتساب عدالت کو جانے والے راستے سیل کر دیئے گئے ہیں۔ احتساب عدالت کے گرد و نواح میں پولیس کے ایک ہزار جوان تعینات ہیں۔ ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے رینجرز کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔ احتساب عدالت کے باہر بکتر بند گاڑی بھی پہنچا دی گئی ہے۔


ای پیپر