Photo Credit Yahoo

آرمی چیف کا دورہ روس ،پاک فوج کی کامیابیوں کا اعتراف
24 اپریل 2018 (21:24) 2018-04-24

ماسکو: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ پاکستان روس کے ساتھ فوجی روابط بڑھانے کی خواہش رکھتا ہے۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ روس کے سرکاری دورے پر ماسکو پہنچ گئے۔ کریملن پیلس میں جنرل قمر جاوید باجوہ کی روس کے فوجی سربراہ سے ملاقات ہوئی۔ روس کے چاقو و چوبند دستے نے آرمی چیف کی آمد پر انہیں سلامی پیش کی ۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاک فوج کے سربراہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی کریملن پیلس آمد پر انہیں گارڈ آف آنر پیش کیا گیا اور دونوں ملکوں کے قومی ترانے بجائے گئے۔ اس موقع پر روسی بری فوج کے کمانڈر جنرل اولیگ سالیوکوف نے دہشتگردی کے خلاف جنگ اور خطے کے امن و استحکام میں پاک فوج کے کردار کی کامیابیوں کا اعتراف کیا۔

روسی عسکری قیادت سے گفتگو کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان علاقائی روابط کی مضبوطی کیلئے کردار ادا کرتا رہے گا اور خطے کو تنازعات سے پاک کرنے کیلئے بھی اپنے حصے کا کردار ادا کرتا رہے گا۔


انہوں نے مزید کہا کہ حالیہ دنوں میں روس نے خطے کی پیچیدہ صورتحال کے حل میں مثبت کردار ادا کیا اور اس کے تعاون سے دہشتگردوں کا مکمل خاتمہ کیا جاسکتا ہے۔کرنل جنرل اولیگ نے کہا کہ روس پاکستان کے ساتھ عسکری تعاون بڑھانے کا خواہش مند ہے۔ انہوں نے دہشتگردی کے خلاف پاکستانی فوج کی قربانیوں کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ عالمی طاقتوں کو بھی اس حوالے سے پاکستان کے مثبت کردار کا اعتراف کرنا چاہیے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے روسی بری فوج کے کمانڈر کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاکستان بھی روس کے ساتھ دوطرفہ عسکری تعلقات میں اضافے کا خواہاں ہے۔ جنرل باجوہ نے کہا کہ حالیہ دنوں میں خطے میں پیچیدہ صورتحال کے حل میں روس نے مثبت کردار ادا کیا ہے۔ پاک فوج کے سربراہ نے کہا کہ پاکستان خطے سے تنازعات کو دور رکھنے کے لیے اپنا کردار ادا کرتا رہے گا جبکہ پاکستان ایسی حکمت عملیوں پر عمل پیرا رہنے کا خواہاں ہے جن سے خطے میں انتشار نہیں بلکہ اتحاد کا ماحول پیدا ہو۔


ای پیپر