سعودی عرب نے پاکستان کو تین ارب ڈالر اور تیل دینے پر رضا مند ہو گیا ،اعلامیہ
23 اکتوبر 2018 (20:39) 2018-10-23

جدہ : سعودی عرب نے ایک دفعہ پھر پاکستان کا مشکل میں ساتھ دیتے ہوئے ایک سال کیلئے تین ارب ڈالر فراہم کرنے کی منظوری دیدی ۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب نے پاکستان کو تقریباً 9 ارب ڈالر کا تیل ادھار پر دینے کا فیصلہ کرلیاہے ،وزیراعظم ہاوس کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق سعودی عرب سے سالانہ 3 ارب ڈالر مالیت کا تیل ادھار پر لینے کے معاہدے پر عمل درآمد تین سال کیلئے ہوگا، سعودی عرب کی جانب سے 3 ارب ڈالرز مالیت کا تیل سالانہ دیا جائے گا، 3 سال بعد اس معاہدے کا جائزہ لیا جائے گا، مجموعی طور پر سعودی عرب پاکستان کو تین سال میں 9 ارب ڈالرز مالیت کا تیل ادھار دے گا۔

اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ سعودی عرب نے پاکستان کے اکاو¿نٹس میں 3 ارب ڈالر ایک سال کیلئے رکھنے کا بھی فیصلہ کیا ہے ۔

دفترخارجہ کے ترجمان کے مطابق پاکستان کو اس رقم کی ہر سال کے بعد ادائیگی کرنا ہو گی،پاکستانی دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ وفاقی وزیر خزانہ اسدعمر نے سعودی ہم منصب کے ساتھ سرمایہ کاری معاہدے پر دستخط کردیے،دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ سعودی عرب نے پاکستان میں آئل ریفائنری کی تعمیر کرنے پر بھی رضامندی ظاہر کر دی ہے، منصوبے پر سعودی کابینہ کی منظوری کے بعد کام شروع ہو گا۔

اسی طرح سعودی عرب پاکستان میں شعبہ معدنیات میں بھی سرمایہ کاری کے لئے رضامند ہو گیا ہے،پاکستانیوں کیلئے ویزا فیس میں بھی کمی کر دی گئی ہے، ترجمان دفترخارجہ کا مطابق معدنیات میں سرمایہ کاری کے لئے جلد سعودی وفد کو دورہ پاکستان کی دعوت دی جائے گی۔


ای پیپر