شیرنی نے چڑیا گھر میں اپنے تین بچوں کے باپ کو ہلاک کر دیا
23 اکتوبر 2018 (12:40) 2018-10-23

انڈیاناپلس:امریکہ میں حکام کا کہنا ہے کہ ایک چڑیا گھر میں ایک شیرنی نے اپنے تین بچوں کے باپ پر حملہ کر کے اسے ہلاک کر دیا ہے۔12 سالہ زوری نامی شیرنی نے 10 سالہ نیئک نامی ببر شیر پر امریکی شہر انڈیانوپلس کے ایک چڑیا گھر میں حملہ کیا تو چڑیا گھر کا عملہ انھیں علیحدہ نہیں کر سکا۔ بعد میں وہ شیر دم گھْٹنے سے مر گیا۔شیروں کا یہ جوڑا گذشتہ آٹھ سال سے ایک ہی پنجرے میں رہتا تھا اور 2015 میں ان کے تین بچے بھی ہوئے تھے۔

چڑیا گھر کی انتظامیہ نے فیس بک پر ایک پوسٹ میں کہا ہے کہ وہ واقعے کی مکمل تحقیقات کریں گے۔پوسٹ میں کہا گیا ہے کہ ’نیئک ایک شاندار شیر تھا اور ہم اسے بہت یاد کریں گے۔عملے کا کہنا ہے کہ شیروں کے پنجرے سے حد سے زیادہ دھاڑوں سے انھیں پتا چلا کہ کچھ غیرمعمولی ہو رہا ہے۔زوری نے نیئک کو گلے سے پکڑا ہوا تھا اور عملے کی دونوں کو علیحدہ کرنے کی کوششیں ناکام رہی تھی۔

عملے کا کہنا ہے کہ دونوں کے درمیان کبھی بھی غیر معمولی جارحیت نہیں دیکھی گئی تھی۔تاہم چڑیا گھر کی انتظامیہ نے واقعے کے بعد کہا ہے کہ شیروں کی دیکھا بھال کے طریقہ کار میں کسی تبدیلی کا ابھی کوئی پلان نہیں ہے۔


ای پیپر