Gujarat Kasab,Modi,PM Modi,Butcher of Kashmir
کیپشن:   مودی کو گجرات قصاب کے بعد اب بوچر آف کشمیر بھی کہا جا رہا ہے :گورنر پنجاب سورس:   ٹوئٹر
23 نومبر 2020 (17:51) 2020-11-23

لاہور:گورنر پنجاب چودھری سرور نے کہا بھارت میں مسلمانوں سمیت اقلیتوں پر زمین تنگ کردی گئی ہے، سب کو معلوم ہے بھارت کس طرح کشمیریوں پر مظالم ڈھا رہا ہے،مقبوضہ کشمیر میں بچوں کے سامنے والدین کو قتل کیا جا رہا ہے،عالمی سطح پر کشمیر کا معاملہ زیادہ سے زیادہ اجاگر کرنا ہے۔

گورنر پنجاب چوہدری سرور نے کشمیر ایشو پر بات کرتے ہوئے کہا بھارت کے ظلم و جبر کے باوجود کشمیریوں کے حوصلے پست نہیں ہوئے،سب کو معلوم ہے بھارت کس طرح کشمیریوں پر مظالم ڈھا رہا ہے، مقبوضہ کشمیر میں بچوں کے سامنے والدین کو قتل کیا جا رہا ہے،کوئی دن نہیں گزرتا جب بھارت مقبوضہ کشمیر میں مظالم نہ ڈھائے،پاکستان کو عالمی سطح پر کشمیر کا معاملہ زیادہ سے زیادہ اجاگر کرنا ہے۔

چوہدری سرور کا کہنا تھا قائداعظم نے فرمایا تھا کشمیر پاکستان کیلئے شہ رگ ہے،پاکستان کے یوم آزادی پر مقبوضہ کشمیر کے ہر گھر پر پاکستانی جھنڈا لہرایا جاتا ہے،کشمیر کے معاملے پر پاکستان کے 22 کروڑ عوام ان کے ساتھ کھڑے ہیں، گورنر پنجاب نے کہا مودی کے کشمیر مظالم کو اب یورپی ارکان پارلیمنٹ میں اٹھانا پڑیگا پھرہی کشمیر ایشو حل ہوگا ، اس وقت سب سے زیادہ کشمیر کا ایشو برطانیہ میں اٹھایا جاتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا مودی جب گجرات کا وزیراعلیٰ تھا اسے قصائی کہا جاتا تھا، مودی کو بوچر آف کشمیر   بھی کہا جاتا ہے،ہماری کوششوں سے برطانیہ نے ایک بار مودی کو اپنے ملک کا ویزا نہیں دیا تھا،چوہدری سرور نے کہا عالمی وبا کی دوسری لہر زیادہ خطرناک ہے، عوام احتیاطی تدابیر اختیار کریں،تمام سیاسی جماعتوں کو چاہیے کہ عالمی وبا کے خطرے کے باعث جلسے نہ کریں ،حکومت نے اپوزیشن کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے کبھی جلسوں میں کوئی رکاوٹ نہیں ڈالی ۔


ای پیپر