Hafiz Saad Rizvi\'s important statement regarding the agreement
کیپشن:   یقین ہے کہ حکومتی ذمہ دار معاہدے سے روگردانی نہیں کریں گے ، حافظ سعد رضوی سورس:   ٹوئٹر
23 نومبر 2020 (21:42) 2020-11-23

لاہور :مولانا خادم حسین رضوی کے بیٹے حافظ سعد رضوی نے نیو نیوز کے پروگرام ’’حرف راز ‘‘میں گفتگو کرتے ہوئے کہا فیض آباد روانہ ہونے سے 2 دن پہلے بھی مولانا کو شدید بخار تھا،دھرنے سے واپس آئے تو تب بھی بخار تھا،انہوں نے کہا مولانا خادم حسین رضوی کرونا کے مریض نہیں تھے ،اس وبا سے متعلق غلط افواہیں پھیلائی گئیں ہیں ۔

حافظ سعد رضوی کا کہنا تھا فیض آبا د معاہدے  میں حکومت اور ہماری طرف سے 3 ذمہ داروں نے دستخط کیے ہیں،یقین ہے کہ حکومتی ذمہ دار معاہدے سے روگردانی نہیں کریں گے ،حکومت کا کہنا تھا کہ اس معاملے پر قانون سازی کر ینگے ،امید ہے مسلمان ہونے کے ناطے کوئی بھی اس قانون کی مخالفت نہیں کرے گا،انہوں نے کہا مسلمان بزدل تو ہوسکتا ہے جھوٹا نہیں ہوسکتا،سیاست میں تمام دروازے کھلے رکھے جاتے ہیں ۔

حافظ سعد رضوی نے کہا ہماری سیاست میں سب  سے پہلے حضورﷺ کی ناموس کا معاملہ ہے ،ہم ختم نبوت کیلئے فیض آباد میں لاشیں اٹھا تے رہےہیں،خادم حسین رضوی کی خصوصیت تھی کہ انہوں نے جماعت میں ذاتی نعرہ نہیں لگنے دیا،ہمیں کبھی بھی مشکل پیش آتی تو حضرت کے پاس پیش ہوتے تو ہماری اصلاح کرتے،انہوں نے بتایا مولانا ہمیشہ کہتے رہے ہیں کہ  اقبال کی کتابوں کو نصاب میں شامل کرنا چاہئے ،لوگوں کو پتہ ہی نہیں ہے کہ اقبال ہے کون؟

سیاسی گرمیوں سے متعلق بات کرتے ہوئے حافظ سعد رضوی کا کہنا تھا کہ چہلم کے بعد تنظیمی سرگرمیاں شروع کریں گے ،جو غلط فہمیاں پیدا کی گئیں اس کو بھی دور کریں گے اور بتائیں گے علامہ صاحب کیا چاہتے تھے ،میرے والد کا نظریہ تھا دنیا کی ہر چیز پڑھو،لیکن اپنے اندر مسلمانیت پیدا کرو،انہوں نے کہا ہم اپنے مسودہ پیش کریں گے کہ اس طرح کا تعلیمی نظام ہونا چاہئے ، میرے والد نے کہا تھا نہ ہم نے آپ کو دینا ہے نہ لینا ہم حضورﷺ کے دین کیلئے نکلے ہیں،حافظ سعد رضوی کا کہنا تھا ہم سب کچھ کر چکے ہیں ،اب قوم بڑھے گی ،ہم اپنی جدوجہد آخری سانس تک جا ری رکھیں گے ۔


ای پیپر