Federal Minister, Shibli Faraz, PEMRA, coverage, opposition meetings, PDM
کیپشن:   فائل فوٹو
23 نومبر 2020 (11:37) 2020-11-23

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز کی پیمرا کو اپوزیشن جلسوں کی کوریج رکوانے کی تجویز، کہا عدالتی احکامات نظر انداز کرکے جلسے کرنا توہین عدالت ہے۔

تفصیلات کے مطابق شبلی فراز نے کہا کہ عوام نے پی ڈی ایم کے پشاور جلسے کا بائیکاٹ کرکے باشعور ہونے کا ثبوت دیا ہے۔ انہوں نے اپوزیشن جماعتوں کے کارکنوں کو مشورہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی وبا سے بچاؤ کیلئے جلسے کے شرکاء خود کو گھروں میں قرنطینہ کرلیں۔

ادھر وفاقی وزیر فواد چودھری نے بھی سخت ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن عالمی وبا کو سیاسی ہتھیار کے طور پر استعمال کرکے حکومت کو دباو میں لانا چاہتی ہے۔ جبکہ مراد سعید نے بھی پی ڈی ایم پر بھرپور وار کیے ، کہا پرچی والے فرزند زرداری پھر ابو کے لیے این آر او مانگنے پشاور گئے ، انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ عوام ان لوگوں کو مسترد کر چکے ہیں۔

ادھر پنجاب حکومت نے صوبے میں پی ڈی ایم کو جلسوں کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ بزدار انتظامیہ کا کہنا ہے کہ قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

ادھر وفاقی وزیر اسد عمر کی زیرصدارت این سی او سی کا اجلاس جاری، وزیر تعلیم شفقت محمود، معاون خصوصی ڈاکٹر فیصل سلطان ، نیشنل کوآرڈینیٹر این سی او سی لیفٹیننٹ جنرل حمود الزمان ، سربراہ قومی ادارہ صحت میجر جنرل عامر اکرام اجلاس میں شریک ہیں۔

اجلاس میں عالمی وبا کے باعث تعلیمی اداروں سے متعلق اہم فیصلے متوقع ہیں۔

این سی او سی حکام اجلاس میں وبا کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دیں گے، جبکہ حساس 16 شہروں میں عالمی وبا کے کیسز اور اموات کی شرح پر غور کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ عالمی وبا کی دوسری لہر نے ملک میں زیادہ تباہی مچا رکھی ہے۔


ای پیپر