Second wave, pandemic, lockdown, NCOC, WHO
23 نومبر 2020 (10:16) 2020-11-23

لاہور: عالمی وبا کی دوسری لہر شدید ہونے لگی، ایک دن میں 34 افراد جان سے گئے، 24 گھنٹوں میں وبا کے مزید 2 ہزار 756 کیس رپورٹ ہوئے ہیں، جس کے بعد متاثرہ افراد کی تعداد 3 لاکھ 76 ہزار 900 سے بڑھ چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق عالمی وبا کے خطرے کے پیش نظر انتظامیہ کا اسمارٹ لاک ڈاؤن کا فیصلہ، آج سے 5 دسمبر تک حیدرآباد کے 17 علاقے سیل رہیں گے، نوٹیفکیشن کے مطابق بلدیہ کالونی ، جرنلسٹ کالونی ، گلستان فاطمہ ، قاسم آباد اور بھٹائی نگر سمیت دیگر علاقے بند رہیں گے۔ اسمارٹ لاک ڈاؤن کے دوران میڈیکل اسٹورز اور ہسپتال مکمل کھلے رہیں گے

کراچی میں ضلع وسطی کے 26 علاقے سیل کر دیئے گئے ہیں۔ سندھ اسمبلی میں پی ٹی آئی پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ عالمی وبا کا شکار ہو گئے ہیں۔

راولپنڈی میں ینگ ڈاکٹرز کے مطالبہ پر بینظیر بھٹو ہسپتال کی او پی ڈی بند کرنے کے احکامات جاری، ملک کے مختلف شہروں میں وبا کی بگڑتی صورتحال کے پیش نظر اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کر دیا گیا۔

ادھر عالمی وبا کی دوسری لہر کی تباہ کاریاں جاری ہیں، دنیا بھر میں وبا سے متاثرہ افراد کی تعداد 5 کروڑ 89 لاکھ 83 ہزار سے تجاوز کر گئی ، وبا سے ہلاکتوں کی تعداد 13 لاکھ 93 ہزار سے زائد ہوچکی ، وبا میں مبتلا اب تک 4 کروڑ 7 لاکھ 65 ہزار سے زائد مریض صحت یاب ہوچکے ہیں، جبکہ اس وقت ایک کروڑ 68 لاکھ 23 ہزار ایکٹو کیسز موجود ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ مناسب اقدامات نہ کيے گئے تو آئندہ برس کے اوائل ميں تيسری لہر کا خطرہ بھی موجود ہے، عالمی ادارہ صحت نے خبردار کر دیا۔

روس کے صدر ولادی میر پیوٹن نے کہا ہے کہ روس ضرورت مند ممالک کو اپنی کی ویکسین فراہم کرنے کے لیے تیار ہے۔


ای پیپر