پے پال نے پاکستان آنے سے معذرت کر لی
23 نومبر 2019 (21:55) 2019-11-23

کیلفورنیا: پاکستان میں آئن لائن کاروبار کی ادائیگی کیلئے استعمال ہونے والی معروف سروس پے پال نے پاکستان میں سروسز کے آغاز سے معذرت کرلی۔ پے پال کی جانب سے کہا گیا ہے کہ وہ مستقبل قریب میں پاکستان آنے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پے پال مستقبل کی حکمت عملی سے متعلق روڈ میپ تیار کرتا ہے، جس میں آئندہ کا ایجنڈا شامل ہوتا ہے، تاہم نئے ایجنڈے میں پے پال کی جانب سے پاکستان میں سروس کی شروعات پر کوئی مکینزم نہیں بنایا گیا۔اس سے قبل اکتوبر میں پاکستان کی وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کا وفد پے پال کمپنی کے ذمہ داروں سے مذاکرات کرنے امریکا گیا تھا تاکہ کمپنی کو قائل کیا جا سکے کہ وہ اپنی خدمات پاکستان میں فراہم کرے، تاہم وہ اس میں کامیاب نہ ہوسکا۔

کمپنی نے وجہ بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسٹیٹ بینک اور دیگر اداروں کی طرف سے مالی معاملات کی شفافیت اور سیکیورٹی سے متعلق کیے گئے اقدامات سے وہ مطمئن نہیں ہیں۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ پے پال کی سروس پاکستان میں رجسٹر ہونے سے جو پاکستانی باہر سے اپنی آمدن حاصل کرتے ہیں انہیں رقوم منگوانے میں آسانی ہوسکے گی۔


ای پیپر