فوٹو بشکریہ فیس بک

عافیہ صدیقی کے بدلے شکیل آفریدی کو رہا کیا جا سکتا ہے: وزیراعظم
23 جولائی 2019 (12:32) 2019-07-23

واشنگٹن: وزیراعظم عمران خان نے امریکی چینل فوکس نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا عافیہ صدیقی کے بدلے شکیل آفریدی کو رہا کیا جا سکتا ہے۔

عمران خان نے انٹرویو میں کہا کہ صدر ٹرمپ کے ساتھ ملاقات کر کے خوشی ہوئی وہ صاف گو انسان لگے جو لفظوں کی ہیرا پھیری نہیں کرتے۔ شکیل آفریدی کا درجہ پاکستان میں جاسوس کا ہے اور عافیہ صدیقی کے بدلے شکیل آفریدی کی رہائی کی بات ہو سکتی ہے۔ امریکی اتحادی ہونے کی وجہ سے اسامہ بن لادن کی گرفتاری میں پاکستان کو اعتماد میں لیا جانا چاہیے تھا۔

عمران خان نے کہا کہ افغانستان کے عوام چار دہائیوں سے خانہ جنگی سے متاثر ہیں اور افغانستان کو امن کی ضرورت ہے جبکہ امریکا کو طالبان سے کوئی خطرہ نہیں ہونا چاہیے۔ طالبان کو سیاست کا حصہ بننا چاہئے تب آپ ایسی حکومت تشکیل دے سکتے ہیں جو افغانستان کی عوام کی نمائندگی کرے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ایران کے مسئلے پر مصالحت کے حق میں ہیں اور مصالحت کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کو تیار ہیں جبکہ بھارت کے ساتھ اچھے تعلقات کے خواہش مند ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر کا حل چاہتے ہیں اور نیوکلیر آپشن نہیں ہے کیونکہ ایک ارب سے زائد لوگ خطے میں رہتے ہیں۔ کسی بھی جنگ سے یہ تمام لوگ متاثر ہوں گے۔


ای پیپر