Source : Yahoo

جسٹس شوکت عزیز صدیقی کیخلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر
23 جولائی 2018 (16:04) 2018-07-23

اسلام آباد: جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے خلاف از خود نوٹس لینے کیلئے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں از خود نوٹس کیلئے دائر کی گئی درخواست میں درخواست گزار نے موقف اپنایا کہ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نواز شریف کے قریبی ساتھی عرفان صدیقی کے عزیز ہیں۔

انہوں نے ریاستی اداروں پر الزام تراشی کرکے ملکی وفاداری سے روگردانی کی اور اپنے حلف کی خلاف ورزی کی ، جسٹس شوکت صدیقی عہدے پر رہنے کی اہلیت کھوچکے ہیں اس لیے انہیں عہدے سے ہٹایا جائے۔واضح رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ کے سینئر ترین جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ہفتہ کے روز راولپنڈی بار کی تقریب سے خطاب کے دوران آئی ایس آئی پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ عدالتی معاملات میں مداخلت کرتی ہے جبکہ نواز شریف اور مریم نواز کی ضمانت نہ ہونے کے پیچھے بھی آئی ایس آئی کا ہاتھ ہے۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے اس بیان پر اتوار کے روز چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے سخت برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ عدلیہ پر کوئی دباﺅ نہیں ہے ، چیف جسٹس نے معاملے کا از خود نوٹس لیتے ہوئے پیمرا سے جسٹس صدیقی کی تقریر کا ریکارڈ بھی طلب کرلیا تھا۔ دوسری جانب پاک فوج نے بھی جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے بیان کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔


ای پیپر