ali zaidi,murad ali shah,pm imran khan,Bitterness,harshly
23 جنوری 2021 (15:09) 2021-01-23

کراچی : وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور وفاقی وزیر علی زیدی میں تلخی ٗوزیر اعلیٰ سندھ نے الزام لگایا ہے کہ میٹنگ میں علی زیدی نے ان سے سخت لہجے میں بات کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق 16 جنوری کو وزیر اعلیٰ ہائوس میں ایک میٹنگ ہوئی تھی جس کے بعد وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے وزیر اعظم عمران خان کو خط لکھا ہے اور اس اجلاس میں وفاقی اور صوبائی حکومت کے نمائندے شریک تھے۔وزیر اعلیٰ سندھ نے یہ موقف اختیار کیا ہے کہ وفاقی وزیر برائے پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی نے اس میٹنگ کے دوران وزیر اعلیٰ سے نامناسب رویہ اختیار کیا اور سخت لہجے میں بات کی ہے۔

خط میں لکھا گیا ہے کہ علی زیدی نے انتہائی متکبرانہ لہجے میں بات کی اور بار بار اپنی بات کو دہرایا اور یہ صرف یہی بار نہیں تھا ۔ اس سے پہلے بھی کئی بار انہوں نے میٹنگز میں سخت لہجہ اختیار کیا اور ان کی اس عادت کو نظر انداز کیا گیا۔علی زیدی انتہائی تکبرانہ لہجے میں بات کرتے ہیں۔تنقید کا نشانہ بناتے ہیں۔وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ وہ ایک شہری کی حیثیت سے ایک عوامی عہدے پر فائض ہیں۔لیکن ان کے ساتھ یہ رویہ اختیار کیا گیا۔ 

انہوں نے وزیر اعظم سے مطالبہ کیا کہ وہ اس بات کا نوٹس لیں اور آئندہ کسی اجلاس میں ایسا نہیں ہونا چاہیے۔اس کے بعد علی زیدی نے بھی وزیر اعظم کو خط لکھا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ کو ایسا نہیں  کرنا  چاہیے تھا کہ وہ وزیر اعظم کو خط لکھتے۔ اس کے ساتھ انہوں نے وزیر اعلیٰ سندھ کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا کہ یہاں کرپشن ہو رہی ہے ٗ کام نہیں ہو رہا اور جب اس پر سوال اٹھایا  جائے تو کہا  جاتا ہے کہ سخت لہجہ اختیار کیا جا رہا ہے۔ 


ای پیپر