Government, laws, Indian farmers, Rahul Gandhi, PM Modi
23 فروری 2021 (08:41) 2021-02-23

نیو دہلی: بھارت کی اپوزیشن پارٹی کانگرس کے رہنما ، راہول گاندھی نے کسانوں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ٹریکٹر ریلی نکالی ، کسان رہنماؤں نے 8 مارچ کو پارلیمنٹ کے گھیراؤ کا اعلان بھی کر دیا ہے۔

راہول گاندھی کسانوں کے احتجاج میں شرکت کیلئے ریاست کیرالہ پہنچے اور کسانوں کے اجتماع سے خطاب کے بعد ریلی نکالی۔ اپوزیشن پارٹی کانگرس کے رہنما نے خود ٹریکٹر چلا کر ریلی کو لیڈ بھی کیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق چھ کلومیٹر طویل ریلی میں ہزاروں کسان ٹریکٹرز سمیت شریک ہوئے۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں راہول گاندھی نے کہا کہ پوری دنیا بھارتی کسانوں کیلئے آواز اٹھا رہی ہے ، صرف مودی حکومت ٹس سے مس نہیں ہو رہی۔

انہوں نے مزید کہا کہ بی جے پی کی حکومت زبردستی قوانین کسانوں پر تھوپ رہی ہے۔ راہول گاندھی نے کہا کہ زراعت سے جڑے افراد کو مودی سرکار کی جانب سے قوانین واپس لینے تک احتجاج جاری رکھنا چاہیے۔

اس سے قبل کاشتکاروں کی پنچائیت سے خطاب کرتے ہوئے کسان رہنما راکیش ٹیکیٹ نے کہا تھا کہ مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو کھڑی فصل کو آگ لگا دیں گے ، انہوں نے مزید کہا کہ 40 لاکھ ٹریکٹر پھر دہلی لے کر جائیں گے۔

کسان رہنما کا کہنا تھا کہ مودی سرکار کی نیت سے زیادہ کاشتکاروں کے ارادے مضبوط ہیں۔ اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ گندم کی کٹائی کے دوران بھی دھرنے جاری رہیں گے۔

واضح رہے بھارت میں کسانوں کا احتجاج گزشتہ برس اگست سے جاری ہے ، کسان رہنماوں کا کہنا ہے کہ مودی سرکار کسانوں کے معاشی حقوق چھین کر صنعتکاروں کو نوازنا چاہتی ہے۔


ای پیپر