PTI government, National Assembly, PM Imran Khan, Pervez Ashraf, PML-N, PPP
23 اپریل 2021 (13:40) 2021-04-23

اسلام آباد:رہنما پیپلز پارٹی راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ حکومت مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے ، یہ جو کہتی ہے وہ کرتی نہیں ، حکومت کا آج قومی اسمبلی میں جو رویہ رہا ہے وہ انتہائی افسوسناک ہے ۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ آج جس طریقے سے اپوزیشن کو قومی اسمبلی میں بات کرنے سے روکا گیا وہ سمجھ سے بالاتر ہے ۔

جب وزیر داخلہ سے پچھلے اجلاس میں پالیسی بیان کا کہا تو انہوں نے جواب دیا کہ وزیراعظم بات کریں گے ۔ آج اسمبلی میں حکومت سے کچھ سوالات کرنا چاہتے تھے ، جاننا چاہتے تھے انہوں نے ٹی ایل پی سے کیا معاہدہ کیا تھا ، جاننا چاہتے تھے کس قانون کے تحت حکومت نے ان پر پابندی لگائی ۔

ایک طرف حکومت نے جلد بازی میں ان پر پابندی لگائی تو دوسری جگہ ان پر فائرنگ کردی ۔ بتایا جائے حکومت نے منگل کو انتہائی عجلت میں اسمبلی کا اجلاس کیوں بلایا تھا ۔ تمام حالات سے محسوس ہوتا ہے حکومت جان بوجھ کر معاملات کو خراب کرنا چاہتی ہے ۔

عمران خان قومی اسمبلی سے غائب ہیں ان کی جگہ ایک پرائیویٹ ممبر نے قرارداد پیش کی ، کیا اس پرائیویٹ ممبر کا ٹی ایل پی کے ساتھ کوئی معاہدہ ہوا تھا ؟ حکومت نے یہ قرارداد کسی حکومتی وزیر کے ذریعے پیش نہیں کی ، حکومت نے ناموس رسالت ﷺ کی قرارداد بھیج کر کہا اسے پاس کیا جائے اور بحث کی جائے ۔

حکومت نے ایوان کو اعتماد میں نہیں لیا اور ٹی ایل پی سے معاہدے بارے نہیں بتایا ، حکومت اتنی عجلت میں اس اہم مسئلے سے روگردانی کیوں کر رہی ہے ؟ حکومت کیوں اپوزیشن کو ان کے سوالات کا جواب دینے سے گریز کر رہی ہے ؟ گزشتہ دنوں ہونے والے واقعات میں جو پولیس اہلکار اور شہری جاں بحق ہوئے ان کا جواب کون دے گا؟

کوئٹہ میں ہونے والے حملے کے بارے میں تفصیلات جانا چاہتے تھے ، اسلام آباد میں سابق چیئرمین پیمراابصار عالم پر ہونے والی فائرنگ کا معاملہ جاننا چاہتے تھے ۔

ٹی ایل پی پر حکومت کی لگائی گئی پابندی غلط ہے ، حکومت بتائے کس قانون کے تحت پابندی لگائی گئی ۔

وزیر داخلہ کا کہنا ہے ٹی ایل پی اور میرے خیالات ایک جیسے ہیں ، اگر ٹی ایل پی پر پابندی لگائی گئی ہے تو وزیرداخلہ پر بھی لگنی چاہئے ۔

حکومت کو ایگزیکٹو آرڈر کے ذریعے فرانسیسی سفیر کے معاملے کو نمٹانا چاہئے ، وزیراعظم اس اہم مسئلے پر اپنے اختیارات استعمال کرنے میں مکمل ناکام ہوئے ہیں ، حکومت کو چاہئے وہ ایوان میں اپوزیشن کو اعتماد میں لے کر متفقہ لائحہ عمل بنائے ، اتنے اہم مسئلے میں غیر سنجیدگی کا مظاہرہ حکومت کی مکمل نااہلی ہے ۔


ای پیپر