امریکہ پابندیاں واپس لے یا سنگین نتائج کیلئے تیار ہو جائے : چین
22 ستمبر 2018 (16:29) 2018-09-22

بیجنگ /ماسکو: چین اور روس نے امریکہ سے کہا ہے کہ وہ چین پر عائد کی جانے والی پابندیاں واپس لے ورنہ سنگین نتائج بھگتنے کیلئے تیار ہو جائے ۔

تفصیلا ت کے مطابق چین کی وزارت خارجہ نے گزشتہ روز امریکہ کی طرف سے چین پر فوجی پابندیاں عائد کرنے کی مخالفت کی اور کہا کہ امریکہ اپنی غلطیوں کا فوری طور پر ازالہ کرے اور چینی فوج پر عائد کی جانے والی پابندیاں فوری طور پر واپس لے ۔ یاد رہے کہ امریکہ نے گزشتہ روز چین کے مرکزی فوجی کمیشن پر پابندیوں کا اعلان کیا تھا کہ وہ روس کے ساتھ اسلحہ کی خریداری بند کردے ۔ چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان گینگ شوانگ نے معمول کی پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ امریکہ نے اس اعلان کے ذریعے بین الاقوامی تعلقات کے بنیادی اصولوں کی سنگین خلاف ورزی کی ہے اور اس نے دونوں ممالک اور دونوں ممالک کی افواج کے درمیان تعلقات کو زبردست نقصان پہنچایا ہے اس لئے ہم امریکہ پر زوردیتے ہیں کہ وہ فوری طور پر اپنی غلطیوں کا ازالہ کرے اور نام نہاد پابندیاں واپس لے ورنہ وہ سنگین نتائج بھگتنے کیلئے تیار ہو جائے ۔

دریں اثناء روس کے نائب وزیرخارجہ سرگئی ریبکوف نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکہ نے روس پر فوجی پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کر کے عالمی استحکام کو زبردست نقصان پہنچایا ہے ۔انہوں نے امریکہ کو وارننگ دی ہے کہ وہ ایسی پابندیاں عائد کر کے آگ سے کھیل رہا ہے ۔ امریکہ کیلئے یہ بہتر ہو گا کہ وہ اس بات کو یاد رکھے کہ عالمی استحکام کا ایک تصور بھی موجود ہے اور اسے امریکہ روس تعلقات میں کشیدگی کو ہوا نہیں دینی چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ آگ سے کھیلنا احمقانہ پن ہے اور یہ بہت خطرناک ثابت ہوسکتا ہے ۔یاد رہے امریکہ کے سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ نے جمعرا ت کو روس کی 33انٹیلی جنس اور فوجی رابطوں سے منسلک اداروں کو بلیک لسٹ میں شامل کر دیا تھا۔ 


ای پیپر