زرداری فضل الرحمن ملاقات میں حکومت کیخلاف ایکا
22 اکتوبر 2018 (22:29) 2018-10-22

اسلام آباد:مفاہمت کے بادشاہ نے ایک دفعہ پھرموجودہ حکومت کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی ،آصف علی زرداری نے کہا کہ جمہوری طاقتیں اس وقت کمزور نظر آ رہی ہیں ،تما م سیاسی جماعتوں سے بات کر کے آئندہ کا لائحہ عمل طے کرینگے ۔

سابق صدر آصف علی زرداری کا مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ10سال تک ہم نے جمہوریت کیلئے ملکرکام کیا،ان کا کہنا تھا کہ لازمی نہیں متحد ہو کر جمہوریت کو خطرے میں ڈالا جائے اور نا اس کا مقصد حکومت کو گرانا ہے بلکہ ہم چاہتے ہیں کہ حکومت کا طریقہ درست کیا جائے ۔

آصف علی زرداری حکومت کے خلاف اپوزیشن کو متحد کرنے کے لیے متحرک ہو گئے، حکومت کے خلاف قرارداد دینے کی تجویز دینے کے بعد آصف علی زرداری مولانا فضل الرحمان کے پاس پہنچ گئے، اپوزیشن کو متحد کرنے اور مشترکہ لائحہ عمل اپنانے پر مشاورت کی گئی۔ ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ ہم نے تمام اپوزیشن کو ساتھ لیکر چلنا ہے، مسلم لیگ (ن) سے رابطہ مولانا کریں گے، وقت بتائے گا اپوزیشن کتنی طاقت ور ہوتی ہے، ضروری نہیں حکومت کو گرایا جائے، حکومت کو طریقہ درست کرنا چاہیے۔

اس موقع پر سربراہ جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ عدم اعتماد پارلیمانی طریقہ کار ہے، موجودہ حکومت کے پاس جعلی مینڈیٹ ہے، یہ جعلی اکثریت ہے اس مینڈیٹ کو نہیں مانتے۔


ای پیپر