وزیر اعظم نے پی ٹی آئی کے تین وزرا کیخلاف تحقیقات کا حکم دیدیا
22 اکتوبر 2018 (14:28) 2018-10-22

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان کی حکومت کے پہلے 100دن میں وفاقی حکومت میں شامل3 وزرا پر کرپشن کا الزام آ گیا۔ وزیر اعظم نے تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔ کرپشن کا الزام ثابت ہونے وزیر اعظم وزرا کو برطرف کر دیں گے ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے اپنے وزراکے کرپشن میں ملوث ہونے کا انکشاف جمعرات کوکابینہ اجلاس کے دوران تمام سرکاری افسروں کوکابینہ اجلاس والے کمرے سے نکالنے کے بعد وزرا سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں وفاقی وزرا ، وزرائے مملکت، معاونین خصوصی اور مشیر موجود تھے۔ عمران خان نے کہا کہ وزراء4 کی کرپشن کے بارے میں ابتدائی رپورٹس موصول ہو چکی ہیں۔ انہوں نے کرپشن الزامات کی تحقیقات کاحکم دے دیا ہے اور الزامات ثابت ہونے پر وہ کسی قسم کی گنجائش نہیں رکھیں گے اور کرپٹ وزرا کو برطرف کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ میری کرپشن کے خلاف 22سالہ جدوجہد ہے اور میں اس پر سمجھوتہ نہیں کروں گا۔ وزیر اعظم کے انکشاف پر کابینہ روم کے شرکا پر سکتہ طاری ہو گیا دوسری جانب وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہا کہ کسی وزیر کے خلاف کرپشن کی تحقیقات نہیں ہو رہیں۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں وفاقی وزیر فواد چودھری کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے کسی وزیر کے خلاف کرپشن کی تحقیقات کی کوئی بات نہیں کی۔ وزیراعظم عمران خان نے کرپشن نہ کرنے پر زور دیا تھا اور کہا تھا کہ کسی قسم کی کرپشن قابل قبول نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کے خبریں بے بنیاد اور جھوٹی ہیں، حکومت کا موقف جانے بغیر اخبار کی جانب سے اس طرح کی شہ سْرخی شائع کیا جانا غیر اخلاقی ہے


ای پیپر