PTI government, January, NAB, accountable, Bilawal Bhutto
کیپشن:   Photo by Twitter سورس:   
22 نومبر 2020 (18:33) 2020-11-22

پشاور: چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ کرپشن حکومت کرتی ہے جبکہ نیب کا نشانہ صرف اپوزیشن بنتی ہے، نیب کو نظر نہیں آتا پشاور میں ملک کا مہنگا ترین میٹرو ہے۔ حکومت جنوری تک کی مہمان ہے۔ نیب سے بھی حساب لیں گے۔

پشاور جلسے میں عوام سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ پختونخوا کی دھرتی بہادروں ، شہیدوں کی سرزمین ہے، پختونخوا کے عوام نے دہشتگردی کا مقابلہ کرتے ہوئے شہادت قبول کی، انہوں نے مزید کہا کہ آمریت کی وجہ سے یہاں کے عوام کے خون کی ہولی کھیلی جاتی تھی۔ جنوبی وزیرستان میں قومی پرچم لہرایا جارہا ہے تو صرف جمہوریت کی وجہ سے ہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ سلیکٹڈ میں اتنی ہمت نہیں تھی کہ دہشتگردی کے خلاف آواز اٹھاتے، نارتھ وزیرستان میں بھی پاکستان کا پرچم لہرایا جانا بھی جمہوریت کی وجہ سے ہے۔ انہوں نے کہا کہ اے پی ایس کے بچوں کے قاتل کو این آر او ملا ہے۔ سلیکٹڈ حکومت نے ہمارے بچوں کے قاتلوں کو جیل سے نکالا ہے۔ یہ کیسی جمہوریت ہے اتنے بڑے دہشتگرد کو سنبھال نہیں سکے، یہ تو گڈ اور بیڈ طالبان کھیل رہے ہیں۔ دہشتگردی میں اضافہ اور ری گروپنگ میں اضافہ ہو رہا ہے۔ پولیس ، فوج اور عوام نے قربانیاں دی ہیں۔

بلاول نے کہا کہ خیبر پختونخوا کے عوام سے ری اسٹرکچرنگ کا وعدہ کیا گیا تھا، آج بھی خیبر پختونخوا ، فاٹا کے بجٹ میں کٹوتی کرتے ہیں، ہم خیبر پختونخوا کے عوام کو اکیلا نہیں چھوڑیں گے، بے گھر ہونے والے آئی ڈی پیز کا خیال نہیں رکھا گیا۔ نالائق اور سلیکٹڈ حکومت عوام کے وسائل پر ڈاکہ ڈال رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ وہی حکومت ہے جو سی پیک کے متبادل روٹ کی بات کرتی تھی۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ کروڈ آئل کی سب سے زیادہ پروڈکشن خیبرپختونخوا میں ہوتی ہے۔ نااہل حکومت عوام کی جیب پر ڈاکہ ڈالتی ہے، آپ کو گیس، کروڈ آئل کی رائلٹی کیوں نہیں ملتی ؟ بلاول نے کہا کہ یہ اپنے سلیکٹرز کے نمائندے ہیں، انہوں نے نجکاری کے نام پر دکان کھولی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عوام مہنگائی کے سونامی میں ڈوب رہے ہیں، غریب آدمی انڈا بھی خرید نہیں سکتا، دوائیوں کی قیمت میں اتنا اضافہ ہوچکا کہ جینا بھی محال ہو گیا۔ ملک میں تاریخی غربت اور مہنگائی ہے، یہ ہے عمران خان اور ان کے سلیکٹرز کا نیا پاکستان۔


ای پیپر