Chinese President, Xi Jinping, Pandemic, G20 summit, Saudi Arabia
22 نومبر 2020 (14:25) 2020-11-22

بیجنگ: چین کے صدر شی جن پنگ نے جی 20 کے ورچوئل اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے رکن ممالک کی توجہ عالمی وبا کی جانب مبذول کراتے ہوئے کہا کہ سب کو مل کر اس کے خاتمے کیلئے اپنا کردار ادا کرنا ہو گا۔

تفصیلات کے مطابق شی جن پنگ نے عالمی رہنماوں سے اس وبا کی ویکسین کی دستیابی کے لیے وسائل کی فراہمی یقینی بنانے کی اپیل کی، انہوں نے سعودی عرب کی سربراہی میں ہونے والے جی ٹوئنٹی ممالک کے اجلاس سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب میں رکن ممالک سے ویکسین کی منصفانہ اور موثر دستیابی کے لیے عالمی ادارہ صحت کو وسائل کی فراہمی یقینی بنانے کا مطالبہ بھی کیا۔

ادھر شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے بھی ویکسین کی منصفانہ تقسیم کے لیے جی 20 رہنماوں پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ اس اجلاس کی سربراہی کرنے پر انہیں بے حد خوشی ہے۔

واضح رہے کہ عالمی وبا کی وجہ سے یہ اجلاس ورچوئل ہو رہا ہے اور تمام رکن ممالک نے اس وبا سے نمٹنے کے لیے مشترکہ تعان پر زور دیا ہے۔ کیونکہ سب جانتے ہیں کہ اس وبا کی وجہ سے پوری دنیا کی معاشی، سیاسی اور معاشرتی سرگرمیاں متاثر ہوئی ہیں۔

جی 20 اجلاس میں رکن ممالک نے بہتر مستقبل کے لیے پائیدار اور جامع پالیسیاں طے کرنے کا عزم بھی کیا۔ شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور شی جنگ پنگ کے علاوہ اجلاس سے باقی رہنماوں نے بھی خطاب کیا۔

ورچوئل اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر طیب اردوان نے جی 20 کو ایک فیملی قرار دیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج سعودی عرب نے دنیا کی عظیم طاقتوں کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کر دیا ہے۔

ترک صدر کا کہنا تھا کہ عالمی وبا نے جی 20 کی اہمیت اور ذمہ داری بڑھا دی ہے۔ انہوں نے ایسے حالات میں جی 20 کا اجلاس منعقد کروانے پر سعودی عرب کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔


ای پیپر