وزیر اعلیٰ پنجاب کا ملازمہ پر تیزاب پھینکنے والے پیر کیخلاف ایکشن
22 May 2019 (18:33) 2019-05-22

لاہور: وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے سرگودھا کی سفاک پیر کی طرف سے ملازمہ کو زیادتی کا نشانہ بنانے اور تیزاب پھینکنے کے واقعہ کے 2 سال بعد نوٹس لے لیا اور ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچانے کی ہدایت کر دی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلی کی ہدایت پر ترجمان وزیراعلی ڈاکٹر شہباز گل گجرات کے نواحی علاقے ڈنگہ کی رہائشی 21 سالہ ماریہ کے گھر گئے۔ ڈاکٹر شہباز گل نے کہا ماریہ مبینہ پیر کے گھر خادمہ تھی دو سال تک ماریہ کو والدین سے ملنے نہ دیا گیا، ملزمان ٹال مٹول اور دبا ڈال کر معاملہ دبانے کی کوشش کرتے رہے، تیزاب سے ماریہ کا سر اور چہرہ مکمل طور پر جھلس چکا ہے۔بروقت مقدمہ درج نہ کرنے اور فیملی سے نازیبا سلوک روا رکھنے پر متعلقہ تھانہ کے عملہ کے خلاف ایکشن لیا جائے گا۔

یاد رہے کہ سرگودھا میں پیر نے گھریلو ملازمہ کو ہوس کا نشانہ بنانے کے بعد مرید کے ساتھ مل کر اس پر تیزاب پھینک دیا تھا ۔ 2 سال تک واقعہ کو چھپا کر رکھا گیا۔ تیزاب سے جھلسنے کا واقعہ 20 اپریل 2017 کو پیش آیا تھا، پولیس نے تیزاب گردی کے الزام میں سفاک پیرعزیر کو حراست میں لے لیا ہے۔


ای پیپر