سفارتکاروں کو ہراساں کیے جانے کے شواہد بھارت کو فراہم کر دئیے:ترجمان دفتر خارجہ
22 مارچ 2018 (19:01)

اسلام آباد : ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے خواجہ معین الدین چشتی کے عرس میں شرکت کےلئے پاکستانی زائرین کو بھارت کی جانب سے ویزہ نہ دینے پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ بھارت میں پاکستانی سفارت کاروں کی ہراسگی کے شواہد بھارت کو فراہم کردیئے ہیں .پاکستان میں اب دہشت گردوں کو کوئی منظم وجود نہیں امریکا انٹیلی جنس معلومات فراہم کرے تو کارروائی کریں گے .پاکستان کو اپنے سفارت کاروں کی بھارت میں ہراسگی پر تحفظات ہیں ۔

جمعرات کو ہفتہ وار بریفنگ کے دوران ترجمان دفتر خارجہ نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے دورہ امریکہ پر آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے امریکہ کے نجی دورے میں امریکی نائب صدرمائیک پینس سے ملاقات کی جس میں امریکہ میں تعینات دفاعی مشیر بھی موجود تھے۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان میں اب دہشت گردوں کو کوئی منظم وجود نہیں ہے .امریکہ انٹیلی جنس معلومات فراہم کرے تو کارروائی کریں گے۔

ڈاکٹر فیصل نے بھارت میں پاکستانی سفارت کاروں کو ہراساں کیے جانے کے معاملے پر بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو اپنے سفارت کاروں کی بھارت میں ہراسگی پر تحفظات ہیں، اس حوالے سے پاکستان نے تمام شواہد بھارت کو فراہم کیے ہیں ۔ ترجمان دفتر خارجہ نے خواجہ معین الدین چشتی کے عرس میں شرکت کےلئے پاکستانی زائرین کو بھارت کی جانب سے ویزہ نہ دینے پر مایوسی کا اظہار کیا۔افغان صدر کی جانب سے وزیراعظم پاکستان کو دورہ افغانستان کی دعوت پر ترجمان نے کہاکہ اس دعوت کا جائزہ لیا جارہا ہے، افغان صدر کی دعوت مثبت پیش رفت ہے، جلد افغان حکام کو جواب سے آگاہ کردیں گے۔


ای پیپر