احتساب عدالت کا نواز شریف کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ
22 مارچ 2018 (12:27) 2018-03-22


اسلام آباد: سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کی جانب سے نیب ریفرنسز میں حاضری سے استثنیٰ کی دائر نئی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا گیاہے، احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد بشیر ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے آغاز پر نواز شریف اور مریم نواز کی جانب سے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کر دی گئی ۔


عدالت سے سات دن کے لئے حاضری سے استثنیٰ مانگا گیا ہے اور درخواست کے ساتھ بیگم کلثوم نواز کی میڈیکل رپورٹ بھی لگائی گئی ہے اور عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ 26 مارچ سے لے کر ایک ہفتے کے لئے حاضری سے استثنیٰ دیا جائے۔ نواز شریف کی جگہ ان کے نمائندے علی ایمل اور مریم نواز کی جگہ ان کے نمائندے جہانگیر جدون احتساب عدالت میں پیش ہوں گے۔وکیل خواجہ حارث نے موقف اختیار کیا کہ کلثوم نواز کی کیمو تھراپی کے لئے نواز شریف اورمریم نوازکو لندن جانا ہے اور ڈاکٹرز نے بھی کلثوم نواز کے شوہر کو بلایا ہے۔


نیب پراسیکیوٹر افضل قریشی نے حاضری سے استثنیٰ کی شدید مخالفت کی اور کہا کہ ٹرائل اختتام کے قریب ہے اس لیے ملزمان کو جانے کی اجازت نہ دی جائے۔ احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے عدالت نے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔


ای پیپر