پاکستان میں کرونا کے علاج پر زبردست پیش رفت
22 جون 2020 (17:36) 2020-06-22

لاہور: پاکستان میں کورونا کے علاج کیلئے گنٹھیا کے مریضوں کی دوا پر تحقیق شروع کردی گئی، پروفیسرجاوید اکرم نے کہا ہے کہ یہ دواکورونامیں پھیپھڑوں کو پہنچنے والے نقصان کو روک سکتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گنٹھیا کے مریضوں کی دوا کا کورونا کے علاج کیلئے استعمال پر ریسرچ شروع کردی گئی، یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز اور اسپین کی مرسیا یونیورسٹی مشترکہ تحقیق کرے گی۔

گنٹھیا کی دوا کولچیسن کو کورونا کے اسٹینڈرڈ علاج کے ساتھ استعمال کرایا جائے گا، ریسرچ میں اسپینش یونیورسٹی سیپروفیسر اور ڈاکٹر جوزمورسیا شامل ہوں گے جبکہ یو ایچ ایس کی جانب سیپروفیسر جاویداکرم اور پروفیسرندیم افضل ریسرچ کا حصہ ہوں گے۔

پروفیسرجاوید اکرم کا کہنا ہے کہ یہ دواکورونامیں پھیپھڑوں کو پہنچنے والے نقصان کو روک سکتی ہے، ایک ہفتے تک ریسرچ پر کام شروع کردیں گے۔یوایچ ایس میں ریسرچ کے حوالے سے اجلاس کا انعقاد ہوا ، جس میں پروفیسرڈومینگوفیگل اورآکسفورڈیونیورسٹی برطانیہ سیڈاکٹرامجد خان کی شرکت کی۔


ای پیپر