اسرائیل نے فلسطینی مسلمانوں کے گھر مسمار کرنے شروع کر دئیے
22 جولائی 2019 (18:09) 2019-07-22

عمران خان کے امریکہ جاتے ہی فلسطین میں بڑی کاروائی شروع

اسرائیل نے فلسطینی مسلمانوں کے گھر مسمار کرنے شروع کر دئیے

مقبوضہ بیت المقدس:وزیر اعظم عمران خان اس وقت امریکہ کے اہم ترین دورہ پر ہیں ،پوری دنیا کی نظریں ٹرمپ ،عمران خان کی ملاقات پر جمی ہوئی ہیں ،جہاں اس وقت مسلم دنیا مسائل کا شکار ہے وہیں فلسطین پر اسرائیلی دہشتگردی ختم ہونے کو نہیں آر ہی ،اب خبروں کے مطابق اسرائیل نے مقبوضہ مغربی کنارے پر قائم فلسطینیوں کے گھروں کو غیر قانونی تعمیرات قرار دے کر مسمار کرنا شروع کردیا۔

فلسطین میں مسمار کیے جانے والے گھروں کے متاثرین کا کہنا تھا کہ انہیں فلسطینی حکام کی جانب سے تعمیرات کی اجازت دی گئی تھی اور یہ اسرائیل کی مغربی کنارے پر قابض ہونے کی کوشش ہے،میڈیا رپورٹس کے مطابق اسرائیلی سپریم کورٹ نے ان عمارتوں کو تعمیرات پر عائد پابندی کی خلاف ورزی قرار دیا ہے،برطانوی میڈیا کے مطابق صور باہر کے مغربی کنارے پر آباد وادی حمص میں پیر کے روز کیے جانے والے آپریشن میں ایک ہزار کے قریب اسرائیلی سیکیورٹی فورسز نے بھاری مشینری کے ساتھ حصہ لیا۔

اقوام متحدہ کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بے گھر کیے جانے والے فلسطینیوں میں 9 مہاجرین ہیں جن میں بچے بھی شامل ہیں جب کہ بلڈنگوں کو مسمار کرنے سے ان میں رہنے والے 350 افراد متاثر ہوئے ہیں۔


ای پیپر