Justice Sardar Tariq Masood,hamza shahbaz,supreme court
22 جنوری 2021 (15:06) 2021-01-22

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے مسلم لیگ(ن) کے رہنما حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت واپس لینے پر خارج کر دی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کے جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے مسلم لیگ(ن) کے رہنما حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر سماعت کی۔ جسٹس سردار طارق مسعود نے ریمارکس دئیے کہ ہائیکورٹ نے ہارڈشپ کا ذکر نہیں کیا تو سپریم کورٹ کیسے یہ مسئلہ دیکھ سکتی ہے۔جو نقطہ ہائیکورٹ میں نہیں اٹھایا گیا ہم وہ سپریم کورٹ میں کیسے سنیں؟جسٹس یحییٰ آفریدی نے کہا کہ احتساب عدالت کی رپورٹ کے بعد مناسب ہو گا کہ ہائیکورٹ سے رجوع کیا جائے۔آپ کیس میرٹ پر لڑنا چاہتے ہیں یا ہارڈ شپ کی بنیاد پر؟

حمزہ شہباز کے وکیل امجد پرویز ایڈووکیٹ نے جواب  دیا کہ ہم ہارڈ شپ کی بنیاد پر ضمانت چاہتے ہیں کیونکہ میرا موقف گزشتہ ایک سال اور سات ماہ سے جیل میں ہے۔ جس پر جسٹس سردار طارق مسعود نے ریمارکس دئیے کہ جب آپ نے ہائیکورٹ میں ہارڈ شپ کا ذکر نہیں کیا تو پھر سپریم کورٹ اس معاملے کو کیسے  دیکھ سکتی ہے؟۔

جس پر حمزہ شہباز کے وکیل نے کہا کہ اس وقت حالات مختلف تھے ٗ گرفتاری کو 1 سال سے کم وقت ہوا تھا۔ اس وقت ہارڈ شپ کا گرائونڈ نہیں بنتا تھا۔کسی کو غیر معینہ مدت تک حراست میںنہیں رکھا جا سکتا۔جب اس وقت ضمانت کیلئے رجوع کیا گیا تھا تو حمزہ شہباز کیخلاف ریفرنس دائر نہیں تھا ۔


ای پیپر