joe biden,pakistan,not seeking,financial assistance,administration,trade
22 جنوری 2021 (09:40) 2021-01-22

واشنگٹن : امریکہ میں پاکستانی سفیر ڈاکٹر اسد مجید خان نے کہا ہے کہ گزشتہ دس ماہ میں ہماری ایکسپورٹس امریکہ کیلئے  دس سے 12 فیصد بڑھی ہیں ۔ امریکہ سے پاکستان جو زر مبادلہ جاتا ہے گزشتہ چھ ماہ میں اس میں 45 سے 48 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ یہ وہ تمام نئی چیزیں ہیں جنہیں ہم اپنے تعلقات کی بہتری کیلئے استعمال کر رہے ہیں۔پاکستان بائیڈن انتظامیہ سے معاشی معاونت کا مطالبہ نہیں کر رہا اور یہ مطالبہ ٹرمپ انتظامیہ سے بھی نہیں کیا گیا تھا۔پاکستان چاہتا ہے کہ تجارت اور سرمایہ کاری کا تعلق قائم کیا جائے۔

ایک ٹی وی انٹرویو میں ڈاکٹر اسد مجید نے کہا کہ زیادہ اقدامات کرو یا کم اقدامات کرو کا سوال نہیں ہےبلکہ درست اقدامات کرنا سب سے اہم ہے۔ پاکستان نے جس طرح افغانستان میں امن کی بحالی کیلئے اقدامات کئے ان کی قدر ہونی چاہیے۔ پاکستان افغانستان اور دیگر جو بھی اقدامات کر رہا ہے وہ ہم اپنی مدد آپ کے تحت کر رہے ہیں۔اس میں پاکستان کا ریکارڈ بہت شاندار ہے۔

امریکہ کی نئی حکومت جب زمینی حقائق کو دیکھے گی تو ان کو نظر آئیگا اورانکو محسوس ہو گا کہ کس طرح سے پاکستان میں تبدیلی آئی ہے۔ وزیر اعظم کی ٹیم کی جب ٹرمپ سے ملاقاتیں ہوئیں تو کسی بھی ملاقات میں ہم نے ٹرمپ سے معاشی مدد نہیں مانگی۔ پاکستان کی خواہش ہو گی کہ ہم امریکہ کے ساتھ مضبوط تجارتی تعلقات قائم کرے۔


ای پیپر