فوٹو بشکریہ فیس بک

نواز شریف کے علاج میں تاخیر کی وجہ سے نقصان ہوا تو ذمہ دار حکومت ہوگی: ڈاکٹر عدنان
22 فروری 2019 (15:34) 2019-02-22

اسلام آباد: نواز شریف کی انجیوگرافی آٹھویں روز بھی نہ ہو سکی، ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کہتے ہیں، حکومت جب کہے گی، انجیو گرافی کرائیں گے، تاخیر کی وجہ سے نقصان ہوا تو حکومت اور ڈاکٹر ذمہ دار ہوں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف جناح ہسپتال سے انجیوگرافی کرانے کو تیار نہیں، بیٹی مریم یہ بھی کہہ چکی ہیں کہ انجیوگرافی کہاں سے کرانی ہے، اس بات کو شریف فیملی طے کرے گی۔

ذاتی معالج کہتے ہیں، حکومت نے انجیوگرافی کا نہیں کہا، جب بھی کہے گی انجیوگرافی کرائیں گے۔ ڈاکٹر عدنان کہتے ہیں انجیو گرافی میں تاخیر کے باعث کوئی نقصان ہوا تو حکومت اور ڈاکٹرز ذمہ دار ہوں گے۔

ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب کہتی ہیں آخری میڈیکل رپورٹ میں نواز شریف کو ایسے ہسپتال میں رکھنے کی تجویز دی گئی جہاں دل کے علاج کی تمام مطلوبہ سہولیات میسر ہوں، لیکن آج 8 روز ہو گئے، عمران خان کی انا، ضد اور عناد پر پنجاب حکومت علاج میں رکاوٹ بنی ہوئی ہے۔


ای پیپر