Source : Neo Tv

اپوزیشن جماعتوں کی ہر بات مان لینگے لیکن احتساب کا عمل نہیں رکے گا :وزیر اعظم
22 دسمبر 2018 (18:11) 2018-12-22

لاہور: صوبہ پنجاب کی 100روزہ کارکر دگی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے  وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ گزشتہ حکومت نے اربوں روپے کا پنجاب کا نقصان کیا اب ہماری پنجاب حکومت صوبہ کو مشکلات سے نکالے گی ۔وزیر اعظم نے دوٹوک الفاظ میں اپوزیشن جماعتوں کو بتا دیا کہ ہر بات آپ کی مان لینگے لیکن احتساب کا عمل نہیں رکے گا ۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب کے علاقوں کے ساتھ گزشتہ دورہ حکومت میں بہت زیادتی ہوئی ،جنوبی پنجاب کا 250ارب روپے کا بجٹ چند شہروں پر لگا دیا گیا ،انہوں نے کہا عثمان بزدار میں آپ کو مبارکباد پیش کرتا ہوں کہ آپ نے پنجاب کے تما م علاقوں کو برابری کے حقوق دینے کی بات کی اور اس پر عملی اقدام بھی شروع کیا ،سابق دورہ حکومت میں پنجاب کا آدھا بجٹ لاہور پر خر چ کر دیا جا تا رہا لیکن اب ایسا نہیں ہوگا ۔

بلوچستان کی مثال دیتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا آج بھی بلوچستان میں احسا س محرومی ہے عوام میں احساس محرومی کی وجہ سے ہی انتشار پھیلتا ہے ،جنوبی پنجاب کے لوگوں میں بھی احساس محرومی ہے گزشتہ حکومتوں نے ان کیلئے کچھ نہیں کیا ،شریف برادران نے سارے کاسارا بجٹ لاہور پر خرچ کیا ،صرف لاہور میں کچھ بہتری ہوئی جس کی وجہ سے دو ر دراز کے علاقوں سے لوگ لاہور آگئے اور پھر لاہور کی مشکلات بڑھ گئیں ۔

شریف برادران اور زرادری سے متعلق بات کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ یہ کیسے لیڈر تھے جنہوں نے حکومت تو پاکستان میں کی لیکن اپنی جائیدادیں ملک سے باہر رکھیں ،اگر ملک کے بڑے بڑے لوگ اپنی سرمایہ کاری خود ملک سے باہر کریں گے تو اورسیز پاکستانی اور بیرونی سرمایہ کار کیسے پاکستان آئیں گے ،یہ لوگ کہتے ہیں کہ احتساب نہ کیا جائے اگر ملک میں چوروں،ڈاکوﺅں کو پکڑنے کا نظام درست نہیں ہو گا تو کوئی بھی پاکستان میںا ٓکر سرمایہ کاری نہیں کریگا ۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اس ملک کی سالمیت، مستقبل اور ا?نے والی نسلوں کے لیے ضروری ہے کہ جب تک کرپشن اور کرپٹ لوگوں پر ہاتھ نہ ڈالا تو ملک کا مستقبل خطرےمیں ہے، لہٰذا اپوزیشن ہم سے یہ نہ کہے کہ احتساب سے پیچھے ہٹ جاو¿،عمران خان ن مزید کہا کہ 22 سال پہلے کرپشن کے خلاف ہی سیاست میں آیا، یہ لوگ پہلے حکومت کو پیسہ بنانے کےلیے استعمال کرتے ہیں اور پھر اسمبلی کو کرپشن بچانے کے لیے استعمال کرتے ہیں مگر یہ اب نہیں ہوگا۔

عمران خان نے کہا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے جو امداد دی ہے اس پر کوئی شرط عائد نہیں، امداد کے بدلے ہم نے کوئی جنگ نہیں لڑنی، ہم امن کے داعی ہیں اور امن کے لیے جو کردارادا کرسکے کریں گے، پاکستان کی جہاں بھی ضرورت پڑی ثالثی کا کردار اداکرے گا، پاکستان کی فوج اب کسی اور کی جنگ نہیں لڑے گی۔


ای پیپر