انسٹاگرام نے نفرت انگیز اور توہین آمیز مواد کو روکنے کے لئے نیا فیچر متعارف کردیا ۔
کیپشن:   Instagram introduced new feature سورس:   سکرین شاٹ
22 اپریل 2021 (18:57) 2021-04-22

 سماجی رابطوں کی مختلف ویب سائٹس  اپنی  ایپس کی کارکردگی کو بہتر بنانے کے لئے  پالیسیز اپ گر یڈ کر تی رہتی ہیں ۔ انسٹاگرام نے بھی ایک نیا فیچر متعارف کرانے کا  فیصلہ کیا ہے۔انسٹاگرام  کے مطابق  صارفین کی جانب سے  ڈائریکٹ میسجز ریکوئسٹس میں نفرت انگیز یا غیر ضروری میسجز موصول ہونے کی شکایات ملنے کے بعد یہ فیچر متعارف کیا جا رہا ہے ۔

انسٹاگرام کی جانب سے جاری بلاگ میں بتایا گیا ہے کہ فوٹو شیئرنگ ایپ میں لوگوں کے ڈائریکٹ میسجز  ریکوئسٹس میں اکثر نفرت انگیز یا غیر ضروری میسجز موصول ہوتے ہیں۔ا ن میں زیادہ تر میسیجز ان افرادکی جانب سے بھیجے جاتے ہیں جن کو صارف جانتا نہیں ہے۔

اس فیچر کو استعمال کرنے کے لیے پرائیویسی سیٹنگز میں ایک نئے سیکشن ہیڈن ورڈز کا  اضافہ کیا گیا ہے ۔ جس کے تحت  میسج ریکوئسٹ ایک علیحدہ ہیڈن ریکوئسٹس فولڈر میں جائے گی اور میسج کی تحریر اس وقت نظر آئے گی جب اس پر کلک کیا جائے گا ۔

اس فیچر کے ساتھ  ایک اور نیا  فیچر بھی متعارف کیا جا رہا ہے جو کسی بلاک کیے جانے والے صارف کی جانب سے رابطے کو مشکل بنادے گا۔اس کے علاوہ  بلاک کیے گئے صارف کی جانب سے بنائے گئے نئے اکاؤنٹس کو بھی بلاک کیا جا سکے گا۔

  اس سلسلے میں اسٹاگرام کی طرف سے ورڈز اور ایموجیز کی فہرست کی فلٹرنگ  کے لیے مختلف اداروں سے اشتراک کیا جارہا ہے۔انسٹاگرام کے مطابق  ریکوئسٹ فلٹر کے فیچر تک صارفین کو آنے والے چند ہفتوں میں رسائی دے دی جائے گی جبکہ اکاؤنٹ بلاکنگ فیچر فعال کرنے کے لیے چند ماہ لگ سکتے ہیں۔


ای پیپر