سی پیک اتھارٹی آرڈیننس تبدیل کرنے پر مریم نواز ڈٹ گئیں
21 اکتوبر 2020 (19:42) 2020-10-21

لاہور : مریم نواز نے وفاقی حکومت کی طرف سے سی پیک اتھارٹی آرڈیننس کو تبدیل کرنے پر سوال اُٹھاتے ہوئے کہا کہ سی پیک اتھارٹی کے چیئرمین اور دیگر افسران کو کیوں استشنیٰ حاصل ہو گا ،کیا آپ آسمان سے اترے ہیں ؟ مریم نوا ز نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ کون سے جرائم ہیں جن کو چھپانے کیلئے استشنیٰ کی ضرورت پڑ گئی ؟

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز حکومت نے چین پاکستان گیم چینجر منصوبے سی پیک اتھارٹی کیلئے نیا قانون لانے کا فیصلہ کر لیا جس کے مطابق چیئرمین سی پیک اتھارٹی اور دیگر افسران کو نیب اور وفاقی تحقیقاتی ادارے (FIA)کی انکوائری سے استشنیٰ ہوگا ۔

حکومت کے اس اقدام کے بعد مریم نواز نے ٹوئٹ کرتے ہو ئے سوالیا انداز میں کہا کہ کیا یہ لوگ آسمان سے اترے ہیں ،ان کو کیوں استشنیٰ حاصل ہوگا ؟

واضح رہے دستاویز میں سی پیک اتھارٹی میں فیصلہ کن کردار کیلئے چیئرمین کے ووٹ کا اختیار ختم کرنے اور اتھارٹی کا سی پیک بزنس کونسل قائم کرنے کا اختیار ختم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ سی پیک بزنس کونسل کی تشکیل اور نوٹیفکیشن کا اجراءبورڈ آف انویسٹمنٹ کرے گا۔اس بات کا امکان ہے کہ مجوزہ قانون کی منظوری اسی ہفتے میں لی جائے گی، صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے 8 اکتوبر 2019 کو آرڈیننس کے ذریعے چائنا پاکستان اقتصادی راہداری ( سی پیک) اتھارٹی قائم کی تھی۔


ای پیپر