سعودی خاتون نے سب سے بڑی پینٹنگ بنا کر گنیز ورلڈ ریکارڈ اپنے نام کرلیا
کیپشن:   Photo by The Jakarta Post سورس:   
21 اکتوبر 2020 (08:35) 2020-10-21

ریاض: سعودی خاتون نے دنیا کی ’سب سے بڑی کافی پینٹنگ‘ بنا کر گنیز ورلڈ ریکارڈ اپنے نام کرلیا۔

عھود عبداللہ المالکی نے زائد المعیاد 'کافی' کو استعمال کرتے ہوئے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے رہنماؤں کی تصاویر تخلیق کی۔ ان کی یہ پینٹنگز 220 مربع میٹر پر بنائی گئی ہیں۔ عھود کو یہ پینٹنگ بنانے میں 45 دن لگے۔ گنیز ورلڈ ریکارڈز کے مطابق یہ پہلا موقع ہے کہ کسی سعودی خاتون کو گنیز ورلڈ ریکارڈ کا حصہ بنایا گیا ہو۔

آرٹسٹ عھود عبداللہ المالکی دنیا کی سب سے بڑی پینٹنگ کا گنیز ورلڈ ریکارڈ بنانے والی پہلی سعودی خاتون بن گئیں۔

عرب نیوز کی رپورٹ کے مطابق یہ کافی سے بنائی گئی دنیا کی سب سے بڑی پینٹنگ ہے جس میں زائد المیعاد کافی کا استعمال کیا گیا ہے۔

اس پینٹنگ میں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی 7 اہم شخصیات کی تصاویر بنائی گئی ہیں۔

سعودی خاتون کی اس پینٹنگ کا نام نسیج 1 ہے اور یہ 220.968 مربع میٹر پر پھیلی ہے، یہ 15.84 میٹر طویل اور 13.95 میٹر چوڑی ہے۔

یہ پینٹنگ ایک دوسرے سے جڑے کاٹن کے 7 کپڑوں سے بنائی گئی ہے۔

عھود عبداللہ المالکی نے اس پینٹنگ میں تقریباً ساڑھے 4 کلو زائد المیعاد کافی پاؤڈر کا استعمال کیا ہے اور کافی پاؤڈر کو پانی کے ساتھ ملا کر تمام تصاویر میں بھورا رنگ بھرا ہے۔

پینٹنگ کے کناروں کو سجاوٹ کے روایتی بدو انداز میں بنایا گیا ہے۔

ایک پریس ریلیز کے مطابق عھود عبداللہ المالکی نے بتایا کہ مجھے 2 گواہان، ویڈیو ریکارڈنگ اور ڈرون فوٹیج کے ساتھ یہ پینٹنگ بنانے میں مسلسل 45 روز لگے۔

انہوں نے کہا کہ میرا مقصد دنیا کو دونوں اقوام کے مابین صدیوں پرانے دوستانہ اتحاد کی یاد دلانا ہے۔

اس متاثر کن پینٹنگ میں مرحوم شاہ عبدالعزیز بن عبدالرحمٰن اور مرحوم شیخ زاید بن سلطان النیہان، شاہ سلمان بن عبدالعزیز السعود، شیخ خلیفہ بن زاید النیہان، شیخ محمد بن راشد المکتوم، شیخ محمد بن زاید النیہان اور ولی عہد شہزادے محمد بن سلمان بن عبدالعزیز السعود کی تصاویر شامل ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ کامیابی میرے اردگرد موجود افراد کی حمایت کے بغیر ناممکن ہوتی، میری خواہش ہے کہ یہ سعودی عرب اور دنیا بھر میں خواتین کو بااختیار بنانے میں کردار ادا کرے۔


ای پیپر