پاکستان زمبابوے کرکٹ سیریز کے لئے میچ آفیشلز کا اعلان
21 اکتوبر 2020 (07:19) 2020-10-21

لاہور: پاکستان اور زمبابوے کے درمیان 3 ایک روزہ اور 3 ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچوں کےلئے میچ آفیشلز کا اعلان کر دیا گیا ہے۔

سیریز کےلئے اعلان کردہ امپائرز پینل میں علیم ڈار، احسن رضا، آصف یعقوب، راشد ریاض اور شوزب رضا شامل ہیں۔ آئی سی سی نے پروفیسر جاوید ملک کو سیریز کے لئے میچ ریفری مقرر کیا ہے۔ تیس اکتوبر سے دس نومبر تک جاری رہنے والی سیریز کے کل چھ میں سے پانچ میچوں میں علیم ڈار آن فیلڈ امپائرنگ کے فرائض انجام دینگے۔

آئی سی سی مینز کرکٹ ورلڈ کپ سپر لیگ میں شامل تین ایک روزہ انٹرنیشنل میچوں کی سیریز راولپنڈی جبکہ تین ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچوں پر مشتمل سیریز لاہور میں کھیلی جائیگی۔ تین مرتبہ آئی سی سی امپائر آف دی ائیر کا اعزاز اپنے نام کرنے والے پاکستانی امپائر علیم ڈار اس وقت آئی سی سی ایلیٹ پینل برائے امپائرز میں شامل ہیں۔

انہیں سیریز میں شامل تین ایک روزہ انٹرنیشنل میچوں سمیت پہلے اور تیسرے ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچز کےلئے آن فیلڈ امپائر مقرر کیا گیا ہے ، جبکہ دوسرے ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچ میں وہ تھرڈ امپائر کی حیثیت سے ذمہ داریاں نبھائیں گے۔

خیال رہے کہ 32 رکنی زمبابوے کرکٹ ٹیم تین ایک روزہ اور تین ٹی ٹونٹی میچوں کی سیریز کھیلنے کے لیے منگل کی صبح پاکستان پہنچی تھی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) ترجمان کے مطابق زمبابوے سکواڈ بذریعہ دبئی اسلام آباد ائیرپورٹ پہنچا۔ اسلام آباد ایئرپورٹ پر پی سی بی حکام نے زمبابوے ٹیم کا پرتپاک استقبال کیا۔

ٹیم کے ہوٹل پہنچنے پر زمبابوے سکواڈ کے کووڈ 19 ٹیسٹ لیے جا رہے ہیں۔ مہمان سکواڈ منگل سے اپنی سات روزہ آئسولیشن کی مدت پوری کرے گا۔ زمبابوے کی ٹیم تین ایک روزہ میچوں کی سیریز راولپنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلے گی جس کا آغاز 30 اکتوبر سے ہوگا۔

یہ سیریز پاکستان کے لئے بہت اہم ہے کیونکہ وہ 30 اکتوبر، یکم اور 3 نومبر کو راولپنڈی میں ہونے والے تین میچز آئی سی سی مینز ورلڈ کپ سپر لیگ کے تین میچوں میں زمبابوے سے کھیل کر آئی سی سی مینز کرکٹ ورلڈ کپ 2023ء کے لئے براہ راست کوالیفائی کرنے کے لئے اپنی بولی شروع کرے گی۔

آئی سی سی نے ون ڈے کرکٹ فراہم کرنے کے لئے سپر لیگ متعارف کرائی ہے اور وہ آئی سی سی مینز کرکٹ ورلڈ کپ 2023 کی اہلیت کے طور پر کام کرے گی ، میزبان اور دیگر ٹاپ سات سائیڈز خود بخود بھارت ایونٹ کے لئے اپنے مقامات کی بکنگ کریں گے۔

13 ٹیمیں، 12 ٹیسٹ کھیلنے والے ممالک اور ہالینڈ پر مشتمل ، سپر لیگ ہر ایک ٹیم کو چار ہوم اور چار دیگر مقامات پرمیچوں کی سیریز کھیلے گی۔ پاکستان اور زمبابوے کے درمیان تین ون ڈے میچ اصل میں ملتان کے لئے شیڈول تھے ، لیکن لاجسٹیکل اور آپریشنل چیلنجز کی وجہ سے انہیں راولپنڈی منتقل کر دیا گیا۔

وینیو میں تبدیلی کے بعد اب تین ، ٹوئنٹی 20 انٹرنیشنل میچ 7 ، 8 اور 10 نومبر کو لاہور میں کھیلے جائیں گے۔ ابتدائی طور پر یہ میچزراولپنڈی میں ہونے کا منصوبہ تھا۔ زمبابوے نے آخری بار 2015 میں تین ون ڈے اور دو ٹی ٹونٹی میچوں کے لئے پاکستان کا دورہ کیا تھا۔ تاہم اب وہ 2019.20کے سیزن میں سری لنکا ، بنگلہ دیش اور میلبورن کرکٹ کلب (ایم سی سی) کے کامیاب دوروں کے بعد پوری طاقت کے ساتھ پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ کے دوبارہ آغاز کے بعد واپس آئے ہیں۔

اس کے علاوہ ایچ بی ایل پاکستان سپر لیگ تاریخ میں پہلی بار کوویڈ 19 کی وبائی بیماری کی وجہ سے 17 مارچ کو آخری چار میچز ملتوی ہونے تک پاکستان میں منعقد ہوئی۔ پانچویں ایڈیشن کے یہ میچز 14 ، 15 اور 17 نومبر کو لاہور میں ہوں گے۔ زمبابوے کرکٹ ٹیم 28 سے 29 اکتوبر تک پنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں سیریز کے لئے پریکٹس سیشن میں حصہ لیں گے۔

پاکستان اور زمبابوے کے درمیان پہلا ایک روزہ کرکٹ میچ 30 اکتوبر کو پنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔ یکم اور تین نومبر کو دوسرا اور تیسرا ایک روزہ میچ بھی پنڈی کرکٹ سٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔ اس کے بعد زمبابوے کرکٹ ٹیم لاہور کا سفر کرے گی جہاں پر پانچ اور چھ نومبر کو قذافی سٹیڈیم میں پریکٹس کریں گے۔

7 نومبر کو پاکستان اور زمبابوے کے درمیان ٹی ٹونٹی میچ قذافی سٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔ 8 نومبر کو دوسرا جبکہ 10 نومبر کو تیسرا ور آخری ٹی ٹونٹی میچ کھیلاجائے گا۔ 12 نومبر کو زمبابوے کرکٹ ٹیم ہرارے کے لئے روانہ ہو گی۔ واضح رہے کہ چیئرمین زمبابوے کرکٹ تیوانگا موکلانی پاکستان اورزمبابوے کرکٹ کے قائم مقام ایم ڈی گیومور ماکونی گزشتہ روز پاکستان پہنچ چکے ہیں۔


ای پیپر