داڑھی کی وجہ سے مارڈالا
21 May 2020 (20:59) 2020-05-21

ممبئی :بھارت کا مکروہ چہرہ پوری دنیا کے سامنے بے نقاب ہو چکا ہے ،آئے روز انتہاپسندی کے نت نئے واقعات دیکھنے اور سننے کو مل رہے ہیں ،ایسا ہی ایک واقع ممبئی میں دیکھنے کو ملا جب بھارتی پولیس نے ایک شخص کی محض اس لئے دہلائی کر ڈالی کہ اس نے داڑھی رکھی ہوئی تھی ،حالانکہ وہ شخص ہندو تھا ۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں شہری دیپک علاج کی غرض سے سرکاری اسپتال جارہا تھا تبھی پولیس نے اسے بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا،پولیس افسران اپنے دفاع میں بیان داغتے ہوئے کہا کہ انہوں نے دیپک کو مسلمان سمجھ لیا تھا اس لیے پیٹ دیا۔

پولیس کی جانب سے دیپک بندیلے نامی وکیل پر ایف آئی آر واپس لینے کے لیے دباؤ بھی ڈالا جارہا ہے،پولیس والوں پر الزام ہے کہ انہوں نے دیپک کی پٹائی محض اس لیے کی کیونکہ حلیہ سے وہ مسلمان لگ رہا تھا، اس معاملے میں پولیس انتظامیہ نے ایک اے ایس آئی کو معطل کردیا۔


ای پیپر