پاکستان میں چینی بحران کی رپورٹ میں اہم انکشافات
21 May 2020 (17:22) 2020-05-21

اسلام آباد: پاکستان میں چینی بحران سے متعلق انکوائری کمیشن کی حتمی رپورٹ سامنے آگئی۔

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے رپورٹ کو جاری کیا۔

شہزاد اکبر کا کہنا تھا کہ وفاقی کابینہ نے چینی بحران کی انکوائری رپورٹ کو منظر عام پر لانے کا فیصلہ کیا تھا،شہزاد اکبر نے پریس کانفرنس میں حقائق سے پردہ اٹھاتے ہوئے کہا کسانوں کیساتھ مل مالکان آفیشل بینکنگ کرتے رہے ،2018-2019 میں ساڑھے 12 روپے فی کلو کا فرق سامنے آیا ،2019-2020 میں چینی کی فی کلو لاگت میں 16 روپے کا فرق پا یا گیا ،کمیشن رپورٹ میں انکشاف کیا گیا کہ شواہد ملے ہیں کہ تمام شوگر ملز نے دو دو کھاتے رکھے ہوئے ہیں۔

شوگر ملز مالکان نے ایک کھاتا سرکار اور دوسرا کھاتا سیٹھ کو دکھانے کیلئے رکھا ہوتا تھا ،شوگر کمیشن کی تحقیقات میں اکائونٹنگ فراڈ بھی سامنے آئے ہیں،2018میں وفاق نے 15.20 ارب روپے کی سبسڈی دی،2018میں وفاق نے 15.20 ارب روپے کی سبسڈی دی ،کمیشن نے لکھ دیا ہے کہ اومنی گروپ کو فائدہ دینے کیلئے سبسڈی دی گئی،افغانستان کو چینی کی برآمد مشکوک ہے۔


ای پیپر