زلفی بخاری کو باہر جانے کی اجازت میں نے دی تھی : اعظم خان
21 جون 2018 (18:19) 2018-06-21

اسلام آباد:نگراں وزیرداخلہ اعظم خان نے تسلیم کر لیا ہے کہ زلفی بخاری کو بیرون ملک جانے کی اجازت انہوں نے دی تھی ۔سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا سینیٹررحمان ملک کی زیرصدارت اجلاس ہوا۔


نگراں وزیر داخلہ اعظم خان نے زلفی بخاری کے معاملے پرسینیٹ داخلہ کمیٹی کوبریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ زلفی بخاری عمران کے ساتھ عمرے پر جارہے ہیں ٗ زلفی بخاری بلیک لسٹ پرہیں اوران کو روک لیاگیا ۔انہوں نے کہا کہ زلفی بخاری نے بیرون ملک جانے کیلئے ون ٹائم پرمیشن مانگی، میں نے زلفی کی فائل دیکھی اور6 روزکیلئے جانے کی اجازت دی ۔نگراں وزیرداخلہ نے کہا کہ میں نے لکھا کہ زلفی بخاری کو واپس آنا ہوگا،مجھے عمران خان سمیت کسی نے کوئی فون نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ سیکرٹری داخلہ نے کہازلفی بخاری نے بلیک لسٹ سے نام نکالنے کی درخواست دی ہے اور زلفی بخاری نے بیان حلفی دیا ہے کہ واپس آئیگا۔


نگراں وزیرداخلہ نے کہا کہ زلفی بخاری کیخلاف نیب میں آف شورکمپنیوں کاکیس ہے،کابینہ کمیٹی نہ ہونے پرزلفی کانام بلیک لسٹ میں ڈالاگیاتھا تاکہ ملک سے نہ جائے۔پی ٹی آئی رہنما اعظم سواتی نے کہا کہ زلفی بخاری کانام بلیک لسٹ سے نکالنے کیلئے عمران خان نے کسی کوفون نہیں کیا۔رحمان ملک نے کہا کہ سیکرٹری داخلہ نے گزشتہ اجلاس میں تردیدکی کہ عمران خان نے ان کوفون کیا۔سینیٹرجاویدعباسی نے کہا کہ جس طرح زلفی بخاری کانام بلیک لسٹ سے نکالاگیا،اس کی مثال نہیں ملتی،بتایا جائے کہ زلفی بخاری کی درخواست کون لیکرآیا؟۔


ای پیپر