لائن آف کنٹرول پر کچھ کیا تو پاکستانی فوج گھس کے مارے گی، سابق بھارتی چیف جسٹس
کیپشن:   Image Source : Facebook
21 فروری 2019 (23:59) 2019-02-21

نئی دہلی:بھارت کے سابق چیف جسٹس مارکنڈے کاٹجو نے بھارت کو خبردار کیا ہے کہ اگر لائن آف کنٹرول پر کچھ کرنے کا سوچا تو پاکستانی فوج گھس کے مارے گی۔

بھارت کے سابق چیف جسٹس نے گزشتہ روزایک انٹرویو میں کہا کہ پلوامہ حملہ قابل مذمت ہے لیکن آج کل جو بدلہ لینے کی باتیں ہوررہی ہیں تو اس کا کیا مطب ہے۔ اب پاکستانی فوج جنگ کے لیے تیار ہے اور اس وقت سرجیکل اسٹرائیک نہیں کی جاسکتی کیونکہ اس مرتبہ بھر پور جواب ملے گا۔انہوں نے کہا کہ جنھوں نے یہ کام کیا وہ تو غائب ہوچکے ہیں اور جو کچھ کشمیر میں ہورہا ہے وہ الگکشمیری عوام بھارت مخالف ہوچکی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کشمیری عوام کے پاس ہتھیار نہیں ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ گوریلہ جنگ اس وقت چلتی ہے جب بھر پور معاونت حاصل ہو۔ حملہ کرنے والے غائب ہوچکے ہیں اوراب بدلا کس سے لیا جائے اس کے لیے سب کو پریشان کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ اب پاکستان پر بھی حملہ ممکن نہیں کیونکہ وہ پوری طرح جواب دینے کے لیے تیار ہیں۔

اب بدلا لینے کا یہ طریقہ ہوتا ہے کہ بے گناہ لوگوں کو پریشان کیا جائے گا۔ جیسے کوئی کشمیری بھارت میںرہ رہا ہے تو اسے پریشان کیا جائے گا اور اس طرح شدت پسندی میں اور اضافہ ہوگا۔سابق چیف جسٹس نے کہا کہ کیا ایکشن لیا جائے گا کیا معصوم لوگوں کو مارا جائے گا۔ یہ ہے حکومت کی بہادری۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ بھی کشمیری ہیں اور ان پر ظلم ہورہا ہے۔انٹرویو کے دوران ان کے ہاتھ میں ایک ڈانڈا موجود تھا جس کے بارے میں انہوں نے بتایا کہ چونکہ وہ بھی کشمیری ہے اور نہتے کشمیریوں کو تنگ کیا جارہا ہے تو میں بھی کشمیری ہوں میرے پاس کیوں نہیں آتے۔ میں تو انظار کررہا ہوں کے کوئی اور اسی لیے میں ڈنڈا لے کر بیٹھا ہوں۔


ای پیپر