Pakistan has a clear position on Israel, says PM Imran Khan
21 دسمبر 2020 (19:35) 2020-12-21

اسلام آباد :وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت حکومتی ترجمانوں کے اجلاس میں اہم فیصلے کر لیے گئے ،اس اہم ترین اجلاس میں وزیر اعظم عمران خان نے ایک دفعہ پھر اسرائیل سے متعلق دو ٹوک الفاظ میں واضح کر دیا کہ پاکستان اسرائیل کو تسلیم نہیں کرنے جا رہا ،حکومتی ترجمان نے دعویٰ کیا کہ نوازشریف ،مولانا فضل الرحمان اسرائیل کو تسلیم کرنے کی کوششیں کرتے رہے،وزیر اعظم نے حکومتی ترجمانوں کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ نواز شریف اور مولانا فضل الرحمن کو ہر فورم پر بے نقاب کریں ۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم کی زیر صدارت حکومتی ترجمانوں کا اہم اجلاس ہوا جس میں وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اسرائیل کے حوالے سے پاکستان کا واضح موقف ہے،حکومتی ترجمانوں نے اجلاس میں کہا نوازشریف مولانا فضل الرحمان اسرائیل کو تسلیم کرنے کی کوششیں کرتے رہے، جس پر عمران خان نے حکومتی ترجمانوں کو واضح ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ نواز شریف اور مولانا فضل الرحمن کو ہر پلیٹ فورم پر بے نقاب کریں ۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا اپوزیشن کی تحریک کا دوسرا مرحلہ بھی ناکام ہوگا،ان کی تحریک صرف این آر او کے لیے ہے، عمران خان نے انکشاف کیا کہ ان لوگوں نے  34 صفحات کا لکھ کر ہم سے این آر مانگاہے لیکن ہم ان کو اب کسی قیمت پر این آ ر او نہیں دینے والے ۔

حکومتی ترجمانو ں کا کہنا تھا مولانا فضل الرحمان نے اثاثے بنائے انہیں نیب کے سامنے سرنڈر کرنا ہوگا،کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں،وزیر اعظم عمران خان نے کہا کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں، ہم جہاد کررہے ہیں مافیا ہمارے خلاف پراپیگنڈہ کررہے ہیں،وزیر اعظم نے پارٹی رہنماؤں اور ترجمانوں کو اپوزیشن کی جانب سے نیب قانون میں مجوزہ ترامیم سامنے لانے کی ہدایت کردی ،وزیر اعظم کا کہنا تھا  اپوزیشن نے نیب قانون میں ترمیم کی شکل میں این آر او مانگا۔

واضح رہے نیب قوانین میں ترمیم اور این آر او سے متعلق اہم انکشافات شبلی فراز پریس کانفرنس میں کر چکے ہیں جس میں ان کا کہناتھا کہ اپوزیشن نے نیب قوانین میں کچھ ایسی تبدیلیاں کروانے کیلئے فیٹف بل کو مشروط کرنے کی کوشش کی جس کے بعد اپوزیشن رہنمائوں کی کمائی حلال ہو جانی تھی ۔


ای پیپر