رمضان میں مساجد بند کر دینگے اگر وائرس پھیلا :وزیر اعظم عمران خان
21 اپریل 2020 (20:44) 2020-04-21

اسلام آباد :وزیر اعظم عمران خان نے ایک دفعہ پھر واضح کرتے ہوئے کہا کہ اگر رمضان میں کرونا پہلا تو ہمیں مساجد کو بھی کرنا پڑ سکتا ہے ۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ تمام دنیا اِس وقت کورونا سے لڑرہی ہے اور امریکا میں 40 ہزار جبکہ اٹلی اوراسپین میں 20، 20 ہزار افراد کورونا کے باعث انتقال کرگئے ہیں، پاکستان میں 192 افراد کا کورونا سے انتقال ہوا ہے،انہوں نے کہا کہ دنیا میں کہیں بھی غیرمعینہ مدت تک لاک ڈاؤن نہیں چل سکتا، پہلے سیمنٹ انڈسٹری اور پھرتعمیراتی شعبے کو کھولا اور تمام صوبوں سے بات چیت کے بعد معاملات کوآگے بڑھارہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ کہا جارہا ہے کہ باقی دنیا میں مساجد بند ہیں تو پاکستان میں کیوں نہیں؟ 20 نکات پرتمام علماء نے دستخط کیے ہیں، لوگ کوشش کریں کہ گھرمیں بیٹھ کرعبادت کریں، اگرلوگ مساجد جانا چاہتے ہیں تو 20 نکات پرعمل کرنا ہوگا،ان کا کہنا تھا کہ علماء کی مشاورت سے 20 نکات بنائے گئے، اگر وائرس پھیلے گا تو مساجد بند کرنی پڑیں گی، جن فیکٹریوں کو کھولنے کی اجازت ہے، ان کو بھی طے کردہ ضابطہ کار پرعمل کرنا ہوگا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ بیرون ملک پاکستانی ہمارا سب سے بڑا اثاثہ ہیں، مختلف ممالک میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے پاکستانی لیبر بے روزگار ہوگئی ہے،ان کا کہنا ہے کہ کوشش کررہے ہیں کہ احساس پروگرام کے ذریعے زیادہ لوگوں تک پہنچیں جبکہ احساس راشن پورٹل لانچ کردیا ہے اور مستحق لوگوں کا ڈیٹا اکٹھا کررہے ہیں۔


ای پیپر