شاعر مشرق علامہ اقبالؒ کی 80 ویں برسی عقیدت و احترام سے منائی جا رہی ہے
21 اپریل 2018 (19:12) 2018-04-21

اسلام آباد: شاعر ِ مشرق حکیم الامت ڈاکٹرعلامہ محمد اقبال کی 80 ویں برسی عقید ت وحترام سے منائی جا رہی ہے ۔ ڈاکٹر علامہ محمد اقبال بیسویں صدی کے معروف شاعر ، مصنف، قانون دان، سیاستدان، مسلم صوفی اور تحریک پاکستان کی اہم ترین شخصیات میں سے ایک تھے۔


تفصیلات کے مطابق ہفتہ کوشاعرِ مشرق حکیم الامت ڈاکٹرعلامہ محمد اقبال کی 80 ویں برسی منائی گئی ، ڈاکٹر علامہ محمد اقبال بیسویں صدی کے معروف شاعر ، مصنف، قانون دان، سیاستدان، مسلم صوفی اور تحریک پاکستان کی اہم ترین شخصیات میں سے ایک تھے۔ علامہ اقبال کی شاعری نے معاشرے کو مثبت رخ پر سوچنے کی فکر دی اور ہر دور میں اسلامی عظمت کو اجاگر کیا۔ علامہ اقبال صرف فلسفی شاعر ہی نہیں بلکہ انسانوں کے استحصال کے بھی خلاف تھے۔ ان کی خواہش تھی کہ انسان رنگ ، نسل اور مذہب کی تمیز کے بغیر ایک دوسرے سے اچھے رویے سے پیش آئیں اور باہمی احترام کی فضا قائم کریں کہ یہی رب کائنات کی منشا ہے ۔ پاکستان کی نئی نسل بھی اقبال کی احترام ِ آدمیت کی سوچ کو سراہتی ہے ۔ علامہ اقبال ایک طرف امت مرحوم کا نوحہ کہتے ہیں تو دوسری طرف نوجوانوں کو ستاروں پر کمند ڈالنے کی ترغیب دیتے نظر آتے ہیں۔


اقبال کی شاعری روایتی انداز سے یکسر مختلف تھی کیونکہ ان کا مقصد بالکل جدا اور یگانہ تھا۔ علامہ اقبال نے اپنی انقلابی سوچ کے ذریعے برصغیر کے مسلمانوں کوعلیحدہ ریاست کا نظریہ دیا جہاں وہ اپنے مذہب اورثقافت کے مطابق زندگی بسرکرسکیں۔انہوں نے اپنی شاعری کے ذریعے برصغیر کے مسلمانوں میں نئی روح پھونکی جو تحریکِ آزادی میں نہایت کارگر ثابت ہوئی۔ آپ نے تمام عمر مسلمانوں میں بیداری و احساسِ ذمہ داری پیدا کرنے کی کوششیں جاری رکھیں اور 21 اپریل1938 کو اپنے خالقِ حقیقی سے جا ملے۔


سپیکرقومی اسمبلی سردارایازصادق نے اس موقع پر اپنے پیغام میں کہاکہ پاکستان علامہ اقبال کی سوچ اورفلسفہ پرعمل پیراہوکرصحیح معنوں میں سیاسی ،معاشی ،سماجی اورمذہبی کامیابی حاصل کرسکتاہے۔


ای پیپر