Photo Credit Yahoo

اللہ اور شہریوں کو راضی کرنا لیکن دیگر لوگوں کو نہیں:خواجہ سعد رفیق
21 اپریل 2018 (18:33) 2018-04-21

راولپنڈی : وفاقی وزیر برائے ریلوے خواجہ سعد رفیق نے خیبر میل اپ گریڈ کوچز کا افتتاح کردیا،انکا کہنا تھاکہ پشاور سے کراچی کے درمیان چلنے والی ٹرین کو جدید سہولتوں سے اراستہ کر کے اپ گریڈ کیا گیا ہے ۔یہ ٹرین موجودہ حکومت کی کاوشوں کی بہتریںمثال ہے جو مسافروں کو مہیا کر رہے ہیں۔ٹرین میں چھ اکانومی،تین اے سی بزنس،ایک اے سی سلیپر،ایک ڈائننگ کار،،اے سٹینڈرڈ،پاور وین،پوسٹل وین،لگیج وین اور ملٹری کورئیر شامل ہیں۔

اس میں مسافروں کے لئے نئی اپ گریڈیشن،چارجنگ پوائنٹس اور دیگر سہولیات فراہم کی گئی ہیںخیبر میل کے افتتاح کے موقع پر مسافروں کو پلیٹ فارم پر جانے سے منع کر دیا گیا جس کی وجہ سے خواتین اور بچوں کوکافی مشکلات کا سامنا کرناپڑا۔ہفتہ کو خیبر میل کے افتتاح کے موقع پرتقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی ریلوئے خواجہ سعد رفیق کا کہناتھا کہ یہ ایک تاریخی ٹرین خیبر میل کا افتتاح کیا گیا ہے جسکی چونسٹھ کوچز ہیںپانچ ہزار مسافروں کو سہولیات فراہم کی جائیں گی چار میں سے دو ٹرین آپ گریڈ کر دی گئیں ہیںاگر ایسا ہی چلتا رہا تو ہر آنے والے سال میں ہر حکومت میں بہتری آئے گیانہوں نے کہا کہ خسارے میں اضافہ ساڑھے تین ارب روپے اور آمدنی میں اضافہ پچاس ارب ہے خسارے میں جو اضافہ ہے اس میں کمی آئی ہے تنخواہ اور پینشن پر ہمارا نہیں فیڈرل گورنمنٹ کا کنٹرول ہے کچھ وقت کے بہتری آ جائے گی دنیا ریلوے میں بہت آگے چلی گئی ہے.

آنے والی حکومت کسی کی بھی ہو بہتر ہوگا کہ ریلوے کو فوکس کیا جائے ایک شفاف کلچر چھوڑ کر جا رہے ہیں، اللہ کو راضی کرنا ہے. اگر ایک دوسرے کو گرانے کا پاکستان میں عمل جاری رہا تو ہم ترقی نہیں کر سکتے ہمارا کام ہے اللہ اور شہریوں کو راضی کرنا لیکن دیگر لوگوں کو نہیںمیں ڈینگیں مارنے والا آدمی نہیں ہوںمیں سپریم کورٹ کے ہر فیصلے پر بات چیت نہیں کرنا چاہتا ۔


سعد رفیق کی باتوں سے لگتا ہے کہ آئندہ آنے والے حکومت بارے کچھ شکوک و شہبات ہیں کہ شاید اب مسلم لیگ ن حکومت میں نہ آئے لیکن یہ صرف باتیں ہی ہیں اس کا فیصلہ تو آنے والا الیکشن اور وقت ہی کرے گا۔


انہوںنے بتایا ہے کہ موجودہ دور حکومت میں اب تک 45ٹرینیں جن میں 645مختلف اقسام کی کوچز شامل ہیں کو اپ گریڈیشن اور ویلیو ایڈیشن کر کے ٹریک پر لایا گیا ہے اور ان ٹرینوں پر اب تک تقریبا ڈیڑھ ارب روپے کی لاگت خرچ کی گئی ہے جو کہ بائیس لاکھ رو پے فی کوچ بنتا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ آئندہ چند مہینو ں میں مذید دو ٹرینوں کی اپ گریڈیشن مکمل ہو جائے گی ۔ سعد رفیق خواجہ سعد رفیق نے کہاکہ خسارہ اور کرپشن دو الگ چیزیں ہیں، ریلوے کی تمام برانچ لائنیں نقصان پرچلتی ہیں، اگر نقصان والے سیکشن بند کردیں تو ریلوے کا آدھا خسارہ کم ہو جائے گا۔


ای پیپر