مرغیوں کیساتھ جنسی فعل ٗ بیوی ویڈیو بناتی رہی
20 اکتوبر 2020 (18:03) 2020-10-20

لندن : برطانیہ سے ایک انتہائی شرمناک خبر سامنے آئی ہے جب پولیس نے ایک 37سالہ شہری کو اس الزام میں گرفتار کیا وہ کو بچوں کے ساتھ جنسی فعل میں ملوث ہے مگر تفتیش کے دوران معلوم ہوا کہ وہ ناصرف بچوں کو اپنے غیر انسانی فعل کا نشانہ بنانا تھا بلکہ پالتو  جانور بھی اس کے گھنائونے مظالم سے محفوظ نہیں تھے۔ وہ اپنے پالتو کتو اور مرغے مرغیوں کو بھی جنسی فعل کا نشانہ بناتا تھا جبکہ اس سارے عمل کے دوران ایک مرغی جان سے ہاتھ بھی دھو بیٹھی حیران کن امر یہ ہے کہ اس کی بیوی بھی اس کے ساتھ اس عمل میں شریک ہوتی اور اس کی شرمناک فعل کی ویڈیو بنایا کرتی تھی۔

تفصیلات کے مطابق لندن پولیس نے کم سن بچوں کیساتھ جنسی فعل کے الزام میں 37 سالہ ریحان بیگ کو گرفتار کیا جس نے چھ سالہ بچے کو بھی اپنے اس عمل کا نشانہ بنایا تھا جب انہوں نے تفتیشی عمل کو آگے بڑھایا تو معلوم ہوا کہ ریحان اپنی 38 سالہ بیوی حلیمہ کیساتھ مل کر جانوروں کو بھی جنسی تشدد کا نشانہ بنایا تھا ۔ اس نے اپنے پالتو کتے کو اس مکروہ فعل کا نشانہ بنایا اور اس کی بیوی نے اس کی کچھ ویڈیو بنائی جن میں وہ اپنی پالتو مرغیوں کو بھی جنسی تشدد کا نشانہ بنا رہا تھا اور اس عمل میں ایک مرغی جاں سے ہاتھ بھی دھو بیٹھی تھی۔

برطانوی عدالت میں پیش کئے  جانے والے ثبوت میں بتایا گیا ہے کہ اس جوڑے نے جانوروں کے ساتھ جنسی فعل کی ویڈیو فولڈر میں محفوظ رکھی تھیں جس کا نام ’’ فیملی ویڈز‘‘رکھا گیا۔ اس کو عدالت میں’’ گھر میں تیار کی جانیوالے فلموں کی پہلی نسل‘‘ قرار دیا گیا۔ان میں سے کچھ ویڈیوز کا دورانیہ بھی زیادہ تھا۔ 

عدالت میں ریحان نے تسلیم کیا کہ وہ اس نے جانوروں کیساتھ یہ غیر انسانی فعل کیا ہے جس پر عدالت نے اسے تین سال کی سزا دی ہے۔


ای پیپر