پاکستان میں لاک ڈائون ہوگا یانہیں؟حکومت نے اعلان کر دیا
20 مارچ 2020 (21:35) 2020-03-20

لاہور :چین سے پھیلنے والا کرونا وائرس پوری دنیا میں آنکھیں دکھانے کے بعد پاکستان میں داخل ہو چکا ہے ،حکومت نے لاک ڈائون سے متعلق اہم اعلان کرتے ہوئے کہا کہ صرف سندھ حکومت نے لاک ڈائون کا فیصلہ کیا ہے جبکہ وفاقی حکومت کا ایسا کوئی پروگرام نہیں ،کیونکہ لاک ڈائون سے سب سے زیادہ ڈیلی ویجز والا ملازم متاثر ہوگا ۔

مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ صوبوں کیساتھ اجلاس میں فیصلہ ہوا ہے ہم 2 ہفتوں کیلئے اوور آل لاک ڈاؤن کی طرف جا  سکتے  ہیں،انہوں نے اس بات کی بھی وضاحت کی کہ حکومت مکمل لاک ڈائون نہیں کرنا چاہتی کیونکہ ایسا کرنے سے سب سے زیادہ ڈیلی ویجز والا ملازم متاثر ہوگا ۔

 این سی سی کی میٹنگ میں تمام وزرائے اعلیٰ وڈیولنک سے شریک ہوئے، کورونا وائرس کا مسئلہ ایک قومی چیلنج ہے، مسئلےکو تمام اسٹیک ہولڈرز اور حکومت کیساتھ ملکر ہی حل کیا جاسکتا ہے، مشترکہ لائحہ عمل بنانے کی ضرورت ہے جس کا اطلاق تمام صوبوں پر ہونا چاہیے۔

مشیر اطلاعات نے بتایا ہے کہ آج این سی سی کی میٹنگ ہوئی جس کی صدارت وزیراعظم عمران خان نے کی اور اجلاس میں تمام وزرائے اعلیٰ وڈیو لنک سےشریک ہوئے۔ اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ کے فیصلے پر وزیراعظم کو تحفظات تھے، حکومتی پریس بریفنگ کے دوران ہی سندھ حکومت نے لاک ڈاؤن کا فیصلہ کرلیا، ڈیلی ویجز پر کمانے والا لاک ڈاؤن سے زیادہ متاثر ہوگا.

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ مشترکہ لائحہ عمل بنانے کی ضرورت ہے جس کا اطلاق تمام صوبوں پر ہونا چاہیے۔ اس حوالے سے حکومت اورلیڈرشپ اپنی اپنی ذات سےعمل درآمد کا آغاز کریں گے، جبکہ عوام کو یہ سمجھانا پڑے گا کہ سماجی طور پر رابطے نہ کرنا ان کے مفاد میں ہے۔


ای پیپر