کرونا وائرس سے بچنے کیلئے وزیر اعظم عمران خان کے دومنصوبے
20 مارچ 2020 (18:45) 2020-03-20

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان نے سینئر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کرونا سے بچنے کیلئے 2 خدشات اور 2 منصوبے بتا دئیے ۔

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس سے لڑنے کیلئے لوگوں کو خود سے ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہوگا، کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ 2 ہفتے بعد کیا صورتحال ہوگی، اگر پاکستان میں اٹلی کی طرح یکدم کیسز بڑھے تو ہمارے لیے سنبھالنا ممکن نہیں رہے گا، کوشش کرنی ہے کہ کرونا کی وجہ سے افراتفری نہ پھیلے اور اشیائے خورو نوش کی فراہمی یقینی بنی رہے، ہم ملک کو لاک ڈاؤن نہیں کرسکتے کیونکہ اگر کرونا سے بچنے کیلئے تین ہفتے لاک ڈاؤن کریں گے تو خدشہ ہے کہ لوگ بھوک اور افلاس سے مرنے لگیں گے۔

کرونا وائرس کے حوالے سے سینئر صحافیوں اور اینکر پرسنز کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ 2 ہفتے بعد کیا صورتحال ہوگی، چین کے تجربے سے سیکھیں گے، عوام کو بتاتے رہیں گے کہ حکومت اس بارے میں کیا اقدامات اٹھا رہی ہے، اس معاملے پر کوئی چیز بھی سنسر نہیں ہوگی ، کیونکہ اگر ہم کیسز چھپائیں گے تو اس سے ہمارا ہی نقصان ہوگا، عوام کو مسلسل آگاہی فراہم کرتے رہیں گے۔

عمران نے ایک دفعہ پھر جہاں کشمیریوں کیلئے آواز اٹھائی تھی وہیں عمران خان نے ایران پر لگائی جانے والی پابندیاں ہٹانے کا مطالبہ بھی کر دیا ،انہوں نے عالمی برادری سے ایران پر عائد پابندیاں ختم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ایران میں کرونا وائرس کے کیسز اتنے زیادہ ہوچکے ہیں کہ ان کی اس سے لڑنے کی استعدادِ کار ختم ہوگئی ہے، اس لیے عالمی برادری پر زور دوں گا کہ ایران سے پابندیاں ہٹائی جائیں۔


ای پیپر