نیوزی لینڈ کے شہریوں نے اسلحہ واپس کرنا شروع کر دیا
20 مارچ 2019 (18:00) 2019-03-20

کرائسٹ چرچ : نیوزی لینڈ میں مساجد پر دہشت گردی کے حملے کے بعد عوام کی طرف سے مسلسل مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کا عمل جاری ہے لیکن آج وہاں سے ایک ایسی خبر آئی ہے کہ کوئی تصور بھی نہیں کر سکتا۔ نیوزی لینڈ کے شہریوں کی ایک کثیر تعداد نے پولیس نے رابطہ کیا ہے کہ وہ اپنا قانونی اسلحہ واپس کرنا چاہتے ہیں

تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ میں  دہشت گردی کے واقعات کے بعد شہریوں نےبڑی تعداد میں پولیس سے رابطہ کیا ہے ۔ شہریوں نے بڑی تعداد میں سوشل میڈیا کا استعمال بھی کیا۔ ایک شہری جان ہارٹ نے لکھا کہ ’’ میں آج کی تاریخ تک نیوزی لینڈ کے ان شہریوں میں شامل تھا جن کے پاس ایک قانونی بندوق تھی لیکن آج میں اسے قانون کے حوالے کر رہا ہوں۔ ایک اور شہری نے لکھا کہ ’’ یہ ہتھیار ہمارے ملک کیلئے خطرناک ہیں اور اس بات کو یقینی بنانے کیلئے کہ ایسا واقعہ دوبارہ نہ ہو ہمیں ملک میں اسلحہ کم سے کم کرنا ہو گا۔ 

ایک اور شہری بلیک سٹون نے پولیس کے پاس اسلحہ جمع کروانے کے بعد رسید سوشل میڈیا پر شیئر کی اور ساتھ لکھا کہ ’’ میں اس کو رکھنا نہیں چاہتا تھا ‘‘۔ 


ای پیپر