سپریم کور ٹ نے ڈاکٹر شاہد مسعود پر تین ماہ کی پابندی عائد کر دی
20 مارچ 2018 (15:58)

زینب قتل کیس میں سنسنی خیز انکشافات کرنے والے اینکر اور سینئر صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود بُری طر ح پھنس گئے ۔ سپریم کورٹ میں کیس کی سماعت ہوئی جس میں اینکر پر تین ماہ کی پابندی عائد کر دی گئی ۔اسلام آباد: سپریم کورٹ نے زینب قتل کیس میں مجرم کے اکائونٹس کا دعویٰ کرنے والے اینکر شاہد مسعود کے پروگرام پر تین ماہ کے لیے پابندی عائد کردی۔چیف جسٹس پاکستان نے شاہد مسعود کے وکیل شاہ خاور کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ شاہ خاور صاحب انہیں سمجھایا کریں اور اپنی زبان میں سمجھا دیں، ورنہ ہمیں بھی آتا ہے کس طرح عزت کروائی جاتی ہے، اب جا کر ٹی وی پر نہ بولنا شروع کردیں۔


شاہد مسعود نے کہا کہ عدالت سے معذرت خواہ ہوں، اس پر چیف جسٹس نے مکالمہ کیا کہ اتنی رعایت دیتے ہیں کہ آف ایئرہونے کی مدت خود طےکرلیں۔اینکر نے کہا کہ آپ میرے پروگرام پر ایک ماہ کے لیے پابندی عائد کردیں۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ کم از کم چھ ماہ آف ایئرکریں گے۔ شاہد مسعود کے وکیل نے کہا کہ چھ ماہ بہت سخت ہوں گے جس پر چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ غیر مشروط معافی لکھ کردیں،جائزہ لیں گے کتنی دل سے معافی مانگی گئی، شاہد مسعود آپ نےقاضی کوپکارا تھا آپ مظلوم ہیں، مظلوم کی پکار پر قاضی آئے گا۔عدالت نے اینکر شاہد مسعود کے پروگرام پر 3 مہینے کے لیے پابندی عائد کرنے کا حکم جاری کیا اور اس حوالے سے پیمرا کو بھی ہدایات جاری کردیں۔


ای پیپر