پاکستان قدرتی آفات سے نمٹنے کے قابل نہیں : ایچ ایس بی بینک
20 مارچ 2018 (14:47) 2018-03-20


اسلام آباد: ایچ ایس بی سی بینک کی ایک تازہ رپورٹ کے مطابق موسمیاتی تبدیلیوں سے سب سے متاثر ہونے کے خطرے سے دوچار ملکوں کی فہرست میں بھارت پہلے نمبر پر ہے جب کہ فہرست میں دوسرا نمبر پاکستان کا ہے۔


ایچ ایس بی سی کے مطابق موسمیاتی تبدیلیوں کے اثرات سے بچنے یا نمٹنے کے لیے تمام ملکوں میں پاکستان سب سے کم صلاحیت کا حامل ہے۔ پاکستان ، بنگلہ دیش اور فلپائن میں غیر معمولی موسمی حالات اور سیلابوں کا خطرہ سب سے زیادہ ہے۔ یہ انکشافات ایچ ایس بی سی بینک کی پیر انیس مارچ کو جاری کردہ رپورٹ میں کیے گئے ہیں۔رپورٹ کے لیے بینک نے سڑسٹھ ملکوں سے اعدادوشمار جمع کیے ہیں۔ نتائج تک پہنچنے کے لیے موسمی حالات میں تبدیلیوں، درجہ حرارت میں اتار چڑھا اور دیگر عوامل کا جائزہ لیا گیا۔فلپائن اور بنگلہ دیش بھی سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملکوں میں شامل ہیں۔


بھارت میں زراعت کا شعبہ سب سے زیادہ متاثر ہو سکتا ہے۔ درجہ حرارت میں اضافے اور بارشوں کی کمی سے سب سے زیادہ متاثر وہ بھارتی دیہی علاقے ہوں گے، جہاں آب پاشی کا مناسب نظام موجود نہیں ۔ ایچ ایس بی سی کی اس رپورٹ کے مطابق موسمیاتی تبدیلیوں سے متاثر ہونے کے خطرے سے دوچار دس سر فہرست ملکوں میں نصف سے زائد جنوبی ایشیا میں ہیں۔ اس گروپ میں عمان، کولمبیا، میکسیکو، کینیا اور جنوبی افریقہ بھی شامل ہیں۔دوسری جانب موسمیاتی تبدیلیوں سے سب سے کم متاثر ہونے والے ملک فن لینڈ، سویڈن، ناروے، ایسٹونیا اور نیوزی لینڈ ہیں۔


ای پیپر